رسائی کے لنکس

ترکی: حکومت کا پارک کی تعمیر روکنے کا عندیہ


مسٹر اردوان نے مظاہرین کو ’’ پریشانی کا سبب بننے والے‘‘ قرار دیتے ہوئے انھیں اس جگہ کو 24 گھنٹوں میں خالی کرنے کا کہا تھا۔

ترکی میں حکومت مخالف مظاہرین کے نمائندوں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے استنبول کے پارک میں تجارتی تعمیراتی منصوبے پر عدالتی فیصلہ آنے تک پیش رفت نہ کرنے کا وعدہ کیا ہے۔ ان نمائندوں نے رات دیر گئے وزیراعظم سے ملاقات کی تھی۔

تاریخی تقسیم چوک کے ایک باغ میں تعمیرات کے منصوبے نے دو ہفتے قبل ملک میں احتجاج کی ایک لہر کو جنم دیا جو دیکھتے ہی دیکھتے حکومت اور وزیراعظم رجب طیب اردوان کے خلاف مظاہروں کی شکل اختیار کرگئی۔

حزب مخالف کی طرف سے وزیراعظم سے ملاقات کرنے والے گروپ میں فنکار، اداکار اور گلوکار بھی شامل تھے۔ اس گروپ نے کا کہنا تھا کہ اردوان نے وعدہ کیا کہ اگر عدالت حکومت کے حق میں فیصلہ دیتی ہے تو وہ منصوبے پر ریفرنڈم کروائیں گے۔

استنبول کے غازی پارک میں جمع ہونے والے مظاہرین نے وزیراعظم کی طرف سے حتمی انتباہ کے باوجود یہاں براجمان رہنے کا عزم ظاہر کیا ہے۔ مسٹر اردوان نے ان لوگوں کو ’’ پریشانی کا سبب بننے والے‘‘ قرار دیتے ہوئے انھیں اس جگہ کو 24 گھنٹوں میں خالی کرنے کا کہا تھا۔

وزیراعظم سے بدھ کو مظاہرین کے ایک اور وفد نے بھی ملاقات کی تھی لیکن احتجاج کرنے والوں کی اکثریت نے اس بات چیت کو یہ کہہ کر رد کردیا تھا کہ یہ وفد حکومت کے چنے گئے لوگوں پر مشتمل تھا۔

حزب مخالف وزیراعظم پر اپنا قدامت پسندانہ اسلامی نکتہ نظر آزاد خیال ترک باشندوں پر تھوپنے کا الزام عائد کرتے ہیں۔
XS
SM
MD
LG