رسائی کے لنکس

پاکستان: پولیو کے مزید 2 نئے کیسز، تعداد 27 ہو گئی


قبائلی علاقوں میں گزشتہ سال سے پولیو مہم پر شدت پسندوں کی جانب سے پابندی کے باعث ہزاروں بچے پولیو سے بچاو کے قطرے پینے سے محروم رہے۔

پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں گزشتہ روز پولیو وائرس کے دو نئے کیسز سامنے آگئے ہیں۔

قومی ادارہ برائے صحت نے ان دو نئے کیسز کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ شمالی وزیرستان میں دو نئے پولیو کیسز سامنے آنے کے بعد پاکستان میں رواں سال پولیو کیسز کی تعداد 27 ہو گئی ہے۔ ان میں سے 17 کیسز فاٹا میں رپورٹ ہوئے۔

شمالی وزیرستان کی ڈیڑھ سالہ مریم بی بی اور گیارہ ماہ کے محمد نامی بچے میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

ذرائع کے مطابق قبائلی علاقوں میں شدت پسندوں کی جانب سے پولیو مہم پر مکمل پابندی عائد ہے جسکے باعث علاقے میں پولیو مہم نہیں چلائی گئی قبائلی علاقوں کے ہزاروں بچے پولیو سے بچاؤ کے قطرے پینے سے محروم رہے۔

مقامی صحافیوں سے گفتگو میں ڈاکٹر جہاں میر خاں نے گفتگو میں کہا ہے کہ قبائلی علاقوں سے تقریباً 42 نمونے اسلام اباد تصدیق کیلئے بھیجے گئے تھے جن میں سے اب تک دو کیسز کی تصدیق ہوئی ہے۔

ان کا مزید کہنا ہے پولیٹیکل انتظامیہ کی جانب سے علاقے میں قبائلی جرگے کے ذریعے عسکریت پسندوں کے ساتھ پولیو ویکسینیشن مہم کی اجازت دینے کیلئے مذاکرات بھی کئے گئے تھے۔

محکمہ ِصحت کے مطابق اگر فاٹا اور قبائلی علاقوں میں فوری طور پر انسداد ِپولیو مہم شروع نہ کی گئی تو مزید پولیو کیسز سامنے آنے کا خدشہ ہے۔
XS
SM
MD
LG