رسائی کے لنکس

سنہ 2010 کی دہائی گرم ترین عشرہ تھا: اقوام متحدہ


موسمیات کی عالمی تنظیم نےکہا ہے کہ عشرے کا ہر ایک سال، ماسوائے 2008ء، اب تک کے گرم ترین سالوں میں شمار ہوتا ہے

اقوام متحدہ کے ایک ادارے کا کہنا ہے کہ انیسویں صدی کے وسط میں جب سے دنیا کے موسمی حالات کا باقاعدہ ریکارڈ رکھا جانے لگا ہے، 2010ء میں مکمل ہونے والی دہائی اب تک کا گرم ترین عشرہ تھا۔

موسمیات کی عالمی تنظیم نےکہا ہے کہ عشرے کا ہر ایک سال، ماسوائے 2008ء، اب تک کے گرم ترین سالوں میں شمار ہوتا ہے۔

جنیوا میں قائم گروپ نے بتایا ہے کہ ان سالوں میں، 2010ء کا سال ریکارڈ کی گئی تاریخ کا گرم ترین سال تھا۔

ادارے نے یہ تحقیق بدھ کے روز جاری کی، جس میں درجہٴحرارت، بخارات اور شدید آفات مثلاً طاقتور سمندری طوفان، خشک سالی اور شدید سیلاب کی تفاصیل درج ہیں۔

گروپ کا یہ بھی کہنا ہے کہ ریکارڈ کے مطابق، 2010ء کے عشرے میں سب سے زیادہ برسات پڑی۔

تنظیم نے بتایا ہے کہ موسم کی تبدیلی ہی قدرتی آفات کا سبب ہیں۔

تاہم، ادارے کے سکریٹری جنرل، مشیل جرود نے کہا ہے کہ گرین ہاؤس گیسز کی بڑھتی ہوئی سطح موسمی تبدیلی کا باعث ہے، جس کے ہمارے ماحول اور سمندروں پر اثرات پڑنا لازم ہیں۔
XS
SM
MD
LG