رسائی کے لنکس

اقوام متحدہ کی رپورٹ کےمطابق آئندہ 40 برسوں کے دوران ، ایشیا کی آبادی، جو دو ارب سے کچھ ہی کم ہے، بڑھ کر تین ارب 30کروڑ ہوجائے گی

ایک حالیہ رپورٹ میں پیش گوئی کی گئی ہےکہ آئندہ چارعشروں کے دوران براعظم افریقہ اور ایشیا کی شہری آبادی میں تیزی سے اضافہ ہوگا۔

اقوام متحدہ کی طرف سے جمعرات کو جاری کی جانے والی والی ایک جائزہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ افریقہ کی شہری آبادی تقریباً تین گنا تیزی سےبڑھ کر 2050ء تک 41کروڑ 40لاکھ سے ایک ارب 20کروڑ ہوجائے گی۔

رپورٹ کے مطابق آئندہ 40 برسوں کے دوران ایشیا کی آبادی، جو دو ارب سے کچھ ہی کم ہے، بڑھ کر تین ارب 30کروڑ ہوجائے گی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2050ء تک چین اور نائیجیریا کے بعد بھارت کی شہری آبادی میں سب سے زیادہ اضافہ ہوگاجب کہ امریکہ اور انڈونیشیا کی آبادی میں بھی خاطر خواہ اضافے کی پیش گوئی کی گئی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ شہری آبادی میں تیزی سے اضافے کے باعث افریقی اور ایشیائی لوگوں کے لیے تعلیم کے میدان میں نئے مواقع پیدا ہوں گے، لیکن رہائشی سہولیات، روزگار، توانائی اور شہری ماحولیات کےشعبوں میں چیلنجز درپیش ہوں گے۔

رپورٹ کے مطابق زلزلوں اور سیلابوں کے باعث ایک ارب سے زائد آبادی والے گنجان آباد شہری مراکز کو خطرات درپیش رہیں گے۔ لیکن ایسے موسمیاتی حادثات زیادہ تر ایشیا میں دیکھنے میں آئیں گے جب کہ یورپ اور افریقہ پر مجموعی طور پر ان کا کم اثر ہوگا۔

XS
SM
MD
LG