رسائی کے لنکس

امریکہ کی ایشیا بحرالکاہل پالیسی جاری رہے گی، ایڈمرل ہیریس


مشرقی بحیرہ چین میں چین کے جنگی جہازوں کا گشت، (فائل فوٹو)

مشرقی بحیرہ چین میں چین کے جنگی جہازوں کا گشت، (فائل فوٹو)

ایڈمرل ہیری ہیریس نے اپنے اتحادیوں کو ایک بار پھر یہ یقین دہانی کرائی ہے کہ امریکہ کی خوش حالی اور سیکیورٹی کے لیے ایشیا بحرالکاہل کا علاقہ بڑی اہمیت رکھتا ہے۔

ایک اعلیٰ امریکی فوجی عہدے دار نے کہا ہے کہ ایشیا بحرالکاہل کے خطے میں امن اور سلامتی قائم رکھنے کا عزم نئی امریکی انتظامیہ کے تحت بھی برقرار رہے گا۔

امریکہ کے بحرالکاہل علاقے کے کمانڈر ایڈمرل ہیری ہیریس نے اپنے اتحادیوں کو ایک بار پھر یہ یقین دہانی کرائی ہے کہ امریکہ کی خوش حالی اور سیکیورٹی کے لیے ایشیا بحرالکاہل کا علاقہ بڑی اہمیت رکھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی صدر براک أوباما جنوری کے وسط میں اپنے عہدے کی مدت ختم ہونے تک اس علاقے میں اپنی دلچسپی برقرار رکھیں گے۔

واشنگٹن میں دفاع سے متعلق ایک سالانہ تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے ایڈمرل ہریس نے کہا کہ آنے والی ٹرمپ انتظامیہ کی پالیسیوں کی ترجيحات کے متعلق میں کوئی پیش گوئی نہیں کر سکتا، لیکن اس میں کوئی شک و شبہ نہیں ہے کہ ہم بحر ہند، ایشیا اور بحرالکاہل کے خطے میں اپنے اتحادیوں سے اپنے وعدوں پر عمل جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ انہیں شمالی کوریا اور چین کی جانب سے سیکیورٹی کے خطرات پر تشویش تھی لیکن جاپان، جنوبی کوریا، آسٹریلیا اور فلپائن کے ساتھ فروغ پاتے ہوئے اتحاد باعث تقویت ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ انہیں چین کی جانب سے جنوبی بحیرہ چین میں جزیروں کی تعمیر پر ہمیں پریشانی ہے ۔ امریکی ایڈمرل نے مشرقی بحیرہ چین میں ایک علیحدہ فضائی دفاعی شناخت کا علاقہ قائم کرنے پر بھی بات کی۔

انہوں نے کہا کہ چین اور امریکہ کے فوجی تعلقات درحقیقت خوشگوار ہیں۔ اور دونوں ملکوں نے اس ہفتے چین میں سانحات سے مقابلے کے حوالے سے مشترکہ فوجی مشقیں کی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکی فوج چین کے ساتھ تعاون کرنے کی کوشش کرے گی لیکن بوقت ضرورت ہم جنگ کے لیے بھی تیار رہیں گے۔

تبصرے دکھائیں

XS
SM
MD
LG