رسائی کے لنکس

القاعدہ کا مرکزی ’گروپ کمزور‘: امریکی عہدیدار


جیمز کلیپر

جیمز کلیپر

نیشنل انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر نے کہا کہ گیارہ ستمبر کے حملوں کو ایک دہائی سے زائد عرصہ گزرنے کے بعد اب امریکہ کو زیادہ تر سائبر حملوں اور سائبر جاسوسی کے خطرات کا سامنا ہے۔

امریکی انٹیلی جنس کے ایک اعلیٰ عہدیدار نے کہا ہے کہ دہشت گرد ’’القاعدہ کا مرکزی گروپ‘‘ اس حد تک کمزور ہو چکا ہے کہ شاید اب وہ مغرب میں زیادہ خطرناک اور شدید حملے نہیں کر سکتا۔

یہ جائزہ نیشنل انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر جمیز کلیپر کی طرف سے کانگرس کو پیش کی گئی سالانہ سکیورٹی رپورٹ کا حصہ تھا۔

انھوں نے کہا کہ گیارہ ستمبر کے حملوں کو ایک دہائی سے زائد عرصہ گزرنے کے بعد اب امریکہ کو زیادہ تر سائبر حملوں اور سائبر جاسوسی کے خطرات کا سامنا ہے۔ کلیپر کا کہنا تھا کہ یہ حملے بجلی کی تنصیبات اور ایسے ہی نظام میں ناقص حفاظتی حصار والے کمپیوٹر نیٹ ورکس پر ہوسکتے ہیں۔

کلیپر نے شمالی کوریا کی دھمکی کا ذکر کرتے ہوئے کہا یہ ملک اس وقت تک جوہری ہتھیار استعمال نہیں کرے گا جب تک اس کی بقا کو خطرہ درپیش نہ ہو۔

ایران سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ وہ ایسی اعلیٰ درجے کی یورینیم پیدا نہیں کر سکتا جو نظر میں آئے بغیر ایٹم بم بنانے کے لیے استعمال کی جا سکے۔
XS
SM
MD
LG