رسائی کے لنکس

سعودی عرب میں دو روز کے لیے امریکی قونصلر خدمات بند


سفارتخانے نے متنبہ کیا تھا کہ سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پر کام کرنے والے مغربی ممالک کے شہریوں کو عسکریت پسندوں کے حملے کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

امریکہ نے سکیورٹی خدشات کی بنا پر سعودی عرب میں ریاض، جدہ اور ظہران میں اپنی قونصلر خدمات اتوار اور پیر کے لیے بند کردی ہیں۔

ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ سفارتخانے کی ٹیلی فون لائنز بھی 15 اور 16 مارچ کو بند رہیں گی۔

'فوکس نیوز' نے انٹیلی جنس ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ سکیورٹی کا خدشہ اس حد تک زیادہ تھا کہ سفارتخانے میں دو روز کے لیے صرف انتہائی ضروری عملہ ہی موجود رہے گا۔

سفارتخانے نے امریکی شہریوں کو سعودی عرب کے غیر ضروری سفر سے ممانعت کے ساتھ ساتھ اندرون ملک سفر کے دوران انتہائی محتاط رہنے کی ہدایت کی ہے۔

بیان میں انتہائی محتاط رہنے کی ہدایت جاری کرنے کی وجوہات کی وضاحت نہیں کی گئی، لیکن اس میں تمام امریکی شہریوں کو سعودی عرب میں رش والی جگہوں پر جانے سے گریز کی ہدایت کے ساتھ ساتھ محفوظ علاقوں اور ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کی تیاریوں کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔

محکمہ خارجہ نے فوکس نیوز کی خبر پر فوری طور پر کسی طرح کا ردعمل ظاہر نہیں کیا ہے۔

جمعہ کو سفارتخانے نے متنبہ کیا تھا کہ سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پر کام کرنے والے مغربی ممالک کے شہریوں کو عسکریت پسندوں کے حملے کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

اس انتباہ میں شدت پسندوں کے وضاحت نہیں کی گئی تھی۔

XS
SM
MD
LG