رسائی کے لنکس

چین اور امریکہ کے جنوبی بحیرہ تنازع پر اختلافات برقرار


جان کیری کی چینی صدر سے ملاقات

جان کیری کی چینی صدر سے ملاقات

ملاقات کے بعد کیری نے ٹوئٹر پر کہا کہ اس میں "دوطرفہ کلیدی امور" اور صدر کے "آئندہ دورہ امریکہ" پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

جنوبی بحیرہ چین میں جغرافیائی تنازع پر بڑھتی ہوئی کشیدگی کے باوجود چین کے صدر شی جنپنگ کا کہنا ہے کہ امریکہ کے ساتھ ان کے تعلقات پائیدار ہیں۔

اتوار کو صدر شی نے امریکی وزیرخارجہ جان کیری کو بتایا کہ وہ ستمبر میں اپنے دورہ امریکہ کے منتظر ہیں اور ان کے بقول اگر طرفین مشترکہ طور پر کام کریں تو چین، امریکہ تعلقات کو نئی بلندیوں تک پہنچایا جا سکتا ہے۔

ملاقات کے بعد کیری نے ٹوئٹر پر کہا کہ اس میں "دوطرفہ کلیدی امور" اور صدر کے "آئندہ دورہ امریکہ" پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس سے قبل ہفتہ کو چین کے وزیر خارجہ وانگ یی نے اپنے امریکی ہم منصب جان کیری کو بتایا تھا کہ بیجنگ اپنی جغرافیائی سالمیت اور خودمختاری کے دفاع کا عزم "چٹان کی طرح مضبوط اور غیر متزلزل ہے"۔

یہ بیان دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ کے درمیان بیجنگ میں تجارت، شمالی کوریا کے جوہری پروگرام اور جنوبی بحیرہ چین کے تنازعات پر ہونے والی تفصیلی بات چیت کے بعد پریس کانفرنس کے دوران سامنے آیا۔

امریکی عہدیداروں کا کہنا تھا کہ گزشتہ ہفتے محکمہ دفاع نے جنوبی بحیرہ چین میں آزادانہ نقل و حرکت کو یقینی بنانے کے لیے فوجی کشتیوں اور جہازوں کو بھیجنے پر غور کیا تھا۔

اس پر چین کی وزارت خارجہ نے فوری ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسے اشتعال انگیزی تصور کیا جائے گا۔

ملاقات کے بعد جان کیری نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ "امریکہ اور چین کے مابین سنجیدہ علاقائی اور عالمی امور پر تعاون بڑھانے سے متعلق وانگ کے ساتھ نتیجہ خیز تبادلہ خیال کیا۔"

ان کا کہنا تھا کہ ملاقات میں "انسانی حقوق، آزادی صحافت، ایران سے مذاکرات، ماحولیاتی تبدیلی اور جنوبی بحیرہ چین" پر توجہ مرکوز رہی۔

جان کیری دو روزہ دورہ چین کے بعد اب جنوبی کوریا جائیں گے جہاں وہ صدر پارک گیون ہئی سے مختلف امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

XS
SM
MD
LG