رسائی کے لنکس

امریکہ: متضاد رپورٹوں سے معاشی بحالی کے بارے میں مایوسی


امریکہ: متضاد رپورٹوں سے معاشی بحالی کے بارے میں مایوسی

امریکہ: متضاد رپورٹوں سے معاشی بحالی کے بارے میں مایوسی

ایک امریکی ادارے نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکہ کی نجی کمپنیوں میں پیدا ہونے والی نئی ملازمتوں کا عمل نومبر میں بھی جاری رہا جس میں امریکی نجی سیکٹر میں گزشتہ تین سال کے دوران سب سے زیادہ 93 ہزارنئی ملازمتوں کے مواقع پیداہوئے۔

بدھ کے روز "اے ڈی پی ایمپلائر سروسز" نامی ادارے کی جانب سے جاری کی گئی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا کہ نومبر کے مہینے میں امریکہ کی نجی کمپنیوں میں 93ہزار نئی ملازمتیں دی گئیں جو گزشتہ تین سال میں سب سے زیادہ ہیں۔ رپورٹ کے مطابق امریکہ کے نجی اداروں میں نئی ملازمتوں کے اجراء کا عمل گزشتہ دس ماہ سے جاری ہے اور اس میں ہر گزرتے مہینے کے ساتھ اضافہ دیکھا جارہا ہے۔

"اے ڈی پی ایمپلائر سروسز" امریکہ بھر میں تنخواہوں کے لاکھوں چیکس پروسس کرنے والا ادارہ ہے اور اپنے اعدادو شمار اسی بنیاد پر مرتب کرتا ہے۔

تاہم دیگر اداروں کی جانب سے جاری کیے جانے والے متضاد اعدادوشمار نے امریکی معیشت میں جلد استحکام آنے کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ہے۔

بدھ ہی کے روز "دی انسٹیٹیوٹ آف سپلائی مینجمنٹ" نامی ایک صنعتی کاروباری گروپ نے اپنی جاری کردہ رپورٹ میں دعویٰ کیا کہ امریکہ کے مینوفیکچرنگ سیکٹر میں نومبر کے دوران لگاتار 16ویں مہینے بھی تیزی دیکھنے میں آئی۔ تاہم سیکٹر میں ترقی کی رفتار میں گزشتہ ماہ کے مقابلے میں کمی ریکارڈ کی گئی۔

امریکہ کے لیبر ڈپارٹمنٹ کی جانب سے بھی بدھ کو ایک رپورٹ کا اجراء کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ جولائی سے ستمبر تک کی تیسری سہ ماہی کے دوران امریکہ کی پیداواری صلاحیت میں 3ء2 فیصد کے حساب سے ترقی ریکارڈ کی گئی۔ تاہم اس کے باوجود کمپنیوں کی جانب سے ملازمتوں کے نئے مواقع بہت کم تعداد میں سامنے آئے۔

امریکی انتظامیہ کی جانب سے ماہانہ "ان ایمپلائمنٹ رپورٹ"جمعہ کے روز جاری کی جائے گی۔ واضح رہے کہ امریکہ میں بے روزگاری کی شرح گزشتہ تین ماہ سے 6ء9 فی صد پر برقرارہے جس کا مطلب یہ ہے کہ امریکہ میں ہر دس میں سے ایک ورکر روزگار سے محروم ہے۔

سرکاری اعدادوشمار کے مطابق عالمی کساد بازاری کے باعث امریکہ کے ڈیڑھ کروڑ افراد کو بے روزگاری کا سامنا ہے۔

XS
SM
MD
LG