رسائی کے لنکس

امدادی کارکنوں، رضاکاروں کے لیے مفت طبی سہولیات کا بل منظور


امدادی کارکنوں، رضاکاروں کے لیے مفت طبی سہولیات کا بل منظور

امدادی کارکنوں، رضاکاروں کے لیے مفت طبی سہولیات کا بل منظور

امریکی ایوان نمائندگان نے قانون کے ایک مسودے کی منظوری دی ہے جس کے تحت گیارہ ستمبر2001ء کے دہشت گرد حملوں سے تباہ ہونے والی عمارتوں کی صفائی کرنے سے بیماریوں کا شکار ہونے والے امدادی کارکنوں اور رضاکاروں کو صحت کی مفت سہولت فراہم کی جائے گی۔

بدھ کے روز بل کے حق میں 268 ووٹ ڈالے گئے۔ اس پر اخراجات کا تخمینہ تقریباً7.4ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔ اب یہ مسودہ امریکی سینٹ میں پیش کیا جائے گا جہاں سے منظوری کی صورت میں صدر براک اوباما کے دستخطوں کے بعد اسے قانون کی شکل حاصل ہوجائے گی۔ صدر اوباما نے ایک بیان میں بل کی حمایت پر ایوان نمائندگان کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ سینیٹ سے منظوری کے بعد وہ اس پر دستخط کردیں گے۔

بعض ریپبلکن قانون سازوں نے اس بل کو حکومت کا ایک مہنگا منصوبہ قراردیتے ہوئے اس پر اعتراض کیا ہے اور کہا ہے کہ اس سے ٹیکسوں میں مزید اضافہ ہوگا۔

ایوان نمائندگان سے منظور ہونے والا یہ مسودہ قانون جیمززاڈروگا کے نام سے منسوب کیا گیا ہے۔ نیویارک پولیس کا یہ اہلکار امدادی کارروائی کے بعد ہلاک ہوگیا تھا۔ زاڈروگا کے حامیوں کا کہنا ہے کہ گراؤنڈ زیرو پر کام کرنے سے اسے سانس کی بیماری ہوئی جو اس کی موت کا باعث بنی لیکن طبی ماہرین اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ زاڈروگا کی موت اس وجہ سے نہیں ہوئی۔

XS
SM
MD
LG