رسائی کے لنکس

داعش کی مادی مدد، مشتبہ شخص کے خلاف قانونی چارہ جوئی


محکمہٴانصاف کی جانب سے جمعرات کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ 38 برس کے امیر سعیدالرحمٰن الغازی کو گذشتہ ماہ گرفتار کیا گیا، جب اُنھوں نے ایک خفیہ ایجنٹ سے اے کے 47 خریدنے کی کوشش کی تھی

امریکی محکمہٴانصاف کا کہنا ہے کہ داعش کے شدت پسندوں کو مادی حمایت فراہم کرنے کے جرم میں، امریکی ریاست، اوہائیو کے ایک مکین کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا آغاز کیا گیا ہے۔

محکمہٴانصاف کی جانب سے جمعرات کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ 38 برس کے امیر سعیدالرحمٰن الغازی کو گذشتہ ماہ گرفتار کیا گیا، جب اُنھوں نے ایک خفیہ ایجنٹ سے اے کے 47 خریدنے کی کوشش کی تھی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ’اِس سال کے اوائل میں، اُنھوں نے اپنا نام رابرٹ میکولم سے بدل کر الغازی رکھا۔ اُن پر الزام ہے کہ اُنھوں نے 2014ء میں سماجی میڈیا کے ذریعے، دولت اسلامیہ اور ابو بکر البغدادی سے اپنی وفاداری کا عہد کیا۔ جولائی 2014ء سے جون 2015ء تک الغازی نے متعدد بیانات دیے جن میں دیگر افراد کو داعش میں شمولیت کی ترغیب دی گئی تھی‘۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اُنھوں نے امریکہ میں حملہ کرنے کی اپنی خواہش کا اظہار کیا اور اے 47 کی ’اسالٹ رائفل‘ خریدنے کی کوشش کی۔

محکمہٴانصاف نے کہا ہے کہ الغازی پر ایسے افراد سے رابطہ کرنے کا الزام ہے، جنھیں مشرق وسطیٰ میں داعش کے ارکان خیال کیا جاتا ہے، جو اِس شدت پسند گروہ کے لیے پروپیگنڈا پر مشتمل وڈیوز بنانے کی حرکات میں ملوث ہیں۔

الغازی کے خلاف اسلحے اور منشیات کےقوانین کی خلاف ورزی کے الزامات بھی عائد ہیں۔

XS
SM
MD
LG