رسائی کے لنکس

حکام کا کہنا ہے کہ کارکنوں کو سڑکوں، پلوں، ریلوے ٹریکس اور دیگر بنیادی ڈھانچے کا جائزہ لینے کے لیے روانہ کر دیا گیا ہے۔

امریکہ کی ریاست لاس اینجلس میں درمیانی شدت کا زلزلہ آیا تاہم اس میں کسی قسم کا جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا۔

لاس اینجلس میں حکام کے مطابق جمعہ کو رات نو بجے کے قریب 5.1 شدت کا زلزلہ آیا جس سے مختلف علاقوں میں گیس اور پانی کی سپلائی لائنوں کو معمولی نوعیت کا نقصان پہنچا۔

مشہور زمانہ ڈزنی لینڈ کی انتظامیہ نے ایک گھنٹے تک پارک کو بند کر کے تمام اشیا اور مقامات کا حفاظتی جائزہ لینے کے بعد اسے دوبارہ عوام کے لیے کھول دیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ کارکنوں کو سڑکوں اور پلوں کا جائزہ لینے کے لیے بھی روانہ کردیا اور وہ اس دوران دیگر ذرائع مواصلات بشمول ریلوے ٹریکس اور دیگر بنیادی ڈھانچے کا بھی جائزہ لیں گے۔

مقامی آبادی کا کہنا ہے کہ یہ زلزلے کے جھٹکے لگ بھگ 30 سیکنڈ تک محسوس کیے گئے۔

گزشتہ ہفتے بھی لاس اینجلس میں 4.4 شدت کا زلزلہ آیا تھا جب اس کے قبل بھی ہلکی شدت کے جھٹکے محسوس کیے جاچکے ہیں۔

کیلیفورنیا ’’رنگ آف فائر‘‘ یا حلقہ آتش نامی خطے میں واقع ہے۔ بحرالکاہل کے گرد پھیلے آتش فشانوں کے لیے یہ اصطلاح استعمال کی جاتی ہے اور یہاں اکثر زلزلے رونما ہوتے رہتے ہیں۔

جاپان میں 2011 میں آنے والا زلزلہ اور سونامی بھی اس حلقہ آتش کا ہی پیدا کردہ تھا۔

جنوبی کیلیفورنیا میں 1994 کے بعد کوئی شدید زلزلہ نہیں آیا۔ اُس وقت 6.7 شدت کے زلزلے سے یہاں درجنوں افراد ہلاک اور املاک کو اربوں ڈالر کا نقصان پہنچا تھا۔
XS
SM
MD
LG