رسائی کے لنکس

یوایس نیول اکیڈمی ، اناپولیس میری لینڈ۔۔ایک اہم تربیتی مرکز


اناپولیس میں یوایس نیول اکیڈمی

اناپولیس میں یوایس نیول اکیڈمی

ریاست میری لینڈ کے شہر اناپولس میں قائم امریکی نیول اکیڈمی ، فوجی تربیت فراہم کرنے والا ایک اہم ادارہ ہے۔ یہاں نوجوان طلبہ سخت تربیت اور تیاری کے بعد نیوی آفیسر بنتے ہیں۔

1845 ءمیں قائم ہونے والی اس نیول اکیڈمی میں تقریباچارہزار نوجوان زیر تعلیم ہیں۔ مستقبل کے پائلٹ اور جوہری آبدوزوں کو چلانے والے آفیسر ، دریائے سیویرن میں کشتیوں پر جہاز رانی کی مشق سے اپنی تربیت کا آغاز کرتے ہیں۔ جہاز رانی کی مشقوں کے ڈائریکٹر کرس ٹامسی کہتے ہیں کہ صدیوں پرانی اس مہارت سے آج بھی طالب علم بہت کچھ سیکھتے ہیں۔

کمانڈر کرس کا کہنا ہے کہ ہم پیشہ وارانہ تربیت کرتے ہیں اور جہاز رانی طلبہ کے اندر قائدانہ صلاحتیوں کو اجاگر کرتی ہے۔وہ کہتے ہیں کہ یہ نوجوان ملک کے بہترین طالب علموں میں سے ایک ہیں ،جو چار سال تک پڑھائی اور تربیت کے سخت ترین مراحل سے گزرتے ہیں۔

22سالہ لورا مارٹینڈل آبدوز میں خدمات سرانجام دینے کے لیے منتخب ہونے والی چند خواتین میں سے ایک ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ نیول اکیڈمی کی تربیت نے انھیں اس کے لیے پہلے ہی تیار کر دیا تھا۔

لورا مارٹینڈل کہتی ہیں کہ یہ اکیڈمی آپ کی راہنمائی کرتی ہے اور راہنما بناتی ہے۔نیوی میں آپ کو کئی جوانوں کی راہنمائی کرنی ہوتی ہے اور آپ کو پتا ہونا چاہئے کہ آپ کیا کرنا چاہتے ہیں اور کہاں جانا چاہتے ہیں۔ یہ ادارہ آپ کی شخصیت کو فی الواقع تبدیل کردیتا ہے۔

لورا مارٹینڈل تو پانی کی گہرائیوں میں جانا چاہتی ہیں، لیکن مڈ شپ مین جاکلین جارڈن ہو ا بازی کا شوق رکھتی ہیں۔ وہ فائٹر پائلٹ بننا چاہتی ہیں۔

لیکن اس تمام تربیت کے ساتھ ساتھ یو ایس نیوی میں ہونے کا مطلب ہے آپ کو ہر وقت جنگ کے لیے تیار رہنا ہے۔ ٹریننگ کوچ بل کارڈیتز کہتے ہیں کہ اس کے بھی اصول و ضوابط ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ نیوی میں اگر آپ اپنے پاس پستول رکھنا چاہتے ہیں تو آپ کو اسکی اہلیت کا امتحان بھی پاس کرنا پڑتا ہے۔

نیوی کے جوانوں کو جسمانی اعتبار سے بھی مضبوط رہنا پڑتا ہے جس کے لیے پورے دن میں انھیں دوڑ لگانے کے علاوہ ورزش یا کوئی کھیل ضرور کھیلنا ہوتا ہے۔ ان تمام خصوصیات کے ساتھ جو چیز سب سے اہم ہے وہ ہے دوسروں کی راہنمائی کرنے کی اہلیت ، جس سے تمام طالب علم بخوبی آگاہ ہیں۔

لورا کہتی ہیں عزت و وقار ، ہمت اور احساس ذمہ داری ، یہ وہ چیزیں ہیں جن کا ادراک ہمیں کرنا ہے۔اور یہ ہماری روزمرہ کی زندگی کا حصہ ہے۔

جب کہ میتھیو ایونزکا کہنا ہے کہ ہم لوگوں کی زندگیوں کے محافظ ہوں گے، میرے کچھ دوست یہاں سے پڑھائی مکمل کرنے کے ایک سال کے اندر عراق جا رہے ہیں۔وہ مشکل وقت میں اپنے ساتھیوں کی قیادت کریں گے ۔میں انکی عزت کرتا ہوں۔ اور نامعلوم کتنے ہی 22 سالہ جوان یہ سب کریں گے۔

چاہے انکی زندگیاں کتنی ہی مختلف کیوں نہ ہوں ، یہاں سے پاس ہونے والے نیوی آفیسر یہ جانتے ہیں کہ اس اکیڈمی نے انھیں زندگی اور موت کو حوالے سےوہ تمام فیصلے کرنے کا اہل بنا دیا ہے، جن کی انھیں ضرورت پڑے گی۔

XS
SM
MD
LG