رسائی کے لنکس

جنگجوؤں کے خلاف فوجی کارروائى کو پھیلایا نہیں جائے گا: پاک فوج


جنگجوؤں کے خلاف فوجی کارروائى کو پھیلایا نہیں جائے گا: پاک فوج

جنگجوؤں کے خلاف فوجی کارروائى کو پھیلایا نہیں جائے گا: پاک فوج


پاکستانی فوج نے کہ وہ شمال مغربی قبائلی علاقوں میں جنگجو عناصر کے خلاف اپنی کارروائیوں میں چھ ماہ سے ایک سال تک کی توسیع نہیں کرے گی۔

فوج کے ترجمان جنرل اطہر عباس نے کہا ہے کہ پاکستان کو اپنی موجودہ کامیابیوں کو مستحکم کرنے کے لیے مزید وقت چاہئیے۔ انہوں نے یہ بات جمعرات کے روز امریکی وزیرِ دفاع رابرٹ گیٹس کے پاکستان کے ایک دورے کے موقعے پر کہی ہے۔

گیٹس اس بارے میں غورو خوض کے لیے اسلام آباد گئے ہیں کہ آیا پاکستان اپنی موجودہ فوجی کارروائیوں کوطالبان کے مضبوط ٹھکانے ، جنوبی وزیرستان سے آگے پھیلائے گا۔

امریکہ چاہتا ہے کہ پاکستا ن، افغان سرحد سے ملے ہوئےعلاقے شمالی وزیرستان پر کوئى حملہ شروع کرے۔افغان طالبان اور القاعدہ سے وابستہ جنگجو اس علاقے کو افغانستان میں حملے کرنے کے لیے ایک اڈے کے طور پر استعمال کرتے ہیں۔

وزیرِ دفاع گیٹس نے جمعرات کے روز پاکستان کے روز نامے دی نیوز میں شائع ہونے والے اپنے ایک مضمون میں کہا ہے کہ پاکستانی طالبان اور افغان طالبان کے درمیان امتیازکرنے سے اُلٹا نقصان ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو پاک – افغان سرحد کے دونوں جانب طالبان پر اپنا دباؤ ڈالنا چاہئیے۔

پاکستان کی موجودہ فوجی کارروائى کا ہدف صرف پاکستانی طالبان ہیں۔

گیٹس نے اسلام آباد پہنچنے سے پہلے کہا تھا کہ وہ پاکستان کو یقین دلائیں گے کہ امریکہ ، طالبان اور القاعدہ کو شکست دینے کا عزم کیے ہوئے ہے اور وہ ایک اتحادی کی حیثیت سے پاکستان کے ساتھ مِل کر کام کرتا رہے گا۔

XS
SM
MD
LG