رسائی کے لنکس

آسٹریا میں برفانی تودے کی زد میں آکر دو امریکی ہلاک


آسٹریا کے نشریاتی ادارے (او آر ایف) کا کہنا ہے کہ ان میں سے کسی بھی کھلاڑی نے برفانی تودے کے دوران پہنا جانے والا ہنگامی لباس نہیں پہنا ہوا تھا۔

امریکہ کی اسکئینگ ٹیم کے دو ارکان آسٹریا میں ایک برفانی تودے کی زد میں آ کر ہلاک ہو گئے۔

پیر کو یہ واقعہ مغربی آسٹریا کے تفریحی مقام سوایلڈن کے پہاڑی علاقے میں پپریٹن باچ گلیشیر کے قریب پیش آیا جہاں سالانہ اسکئینگ کے عالمی کپ کے افتتاحی مقابلے ہو رہے ہیں۔

امریکی اسکئی اور سنوبورڈ ایسوسی ایشن (یوایس ایس اے) کی طرف سے جاری بیان کے مطابق 20 سالہ رونی برلاک اور 19 سالہ برائس ایسٹل، ٹائرول کے علاقے میں سوایلڈن کے مقام پر برفانی تودے کی زد میں آگئے جبکہ ان کی ٹیم کے چار ساتھی بچ گئے۔

جب یہ واقعہ پیش آیا اس وقت ان کے ساتھ کوئی بھی کوچ موجود نہیں تھا۔ آسٹریا کے نشریاتی ادارے (او آر ایف) کا کہنا ہے کہ ان میں سے کسی بھی کھلاڑی نے برفانی تودے کے دوران پہنا جانے والا ہنگامی لباس نہیں پہنا ہوا تھا۔

اس علاقے میں کئی دنوں سے برفباری اور کم درجہ حرارت کی وجہ سے برفانی تودے گرنے سے متعلق انتباہ جاری کیا جا چکا تھا۔

نیو ہیمپشائر سے تعلق رکھنے والے برلاک 2013 سے امریکی ڈیویلپمنٹ ٹیم کا حصہ تھے جبکہ ایسٹل کو اس سیزن کے دوران ٹیم کے ساتھ تربیت حاصل کرنے کی دعوت دی گئی تھی۔

'یو ایس ایس آے' کے صدر ٹائیگرشا نے ایک بیان میں کہا ہے کہ "رونی اور برائس ،اسکئی کے نمایاں کھلاڑی تھے جو اپنے کھیل کے بارے میں ریس کورس اور پہاڑوں میں اسکئی کرنے کے بارے میں بہت پر جوش تھے، جو کچھ وہ کرتے تھے اس سے وہ محبت کرتے تھے اور یہ پیغام انہوں نے ان (لوگوں کو ) دیا جو ان کے ساتھ تھے"۔

XS
SM
MD
LG