رسائی کے لنکس

افغانستان کے1.6 ارب ڈالرقرضوں کی تنسیخ


افغانستان کے1.6 ارب ڈالرقرضوں کی تنسیخ

افغانستان کے1.6 ارب ڈالرقرضوں کی تنسیخ

واشنگٹن نے افغانستان اور پیرس کلب کے درمیان اُس سمجھوتے کا خیر مقد کیا ہے جِس کے تحت پیرس کلب میں قرض فراہم کرنے والے 19 ملک اِس بات پر رضا مند ہوگئے ہیں کہ وہ افغانستان پر واجب الادا رُکن ملکوں کے تمام قرضوں اور بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے فراہم کیے ہوئے قرضوں کو منسوخ کردیں گے۔

اُن قرضوں کی کُل رقم لگ بھگ ایک ارب 60 کروڑ ڈالر ہے ۔

امریکہ کے محکمہٴ خارجہ نے بدھ کے روز ایک بیان جاری کیا ہے جِس میں کہا گیا ہے کہ یہ فیصلہ افغانستان کے لیے ایک عظیم کارنامہ ہے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ قرض کے بوجھ کوختم کردینا افغانستان کی اقتصادی بحالی کی راہ پر ایک بہت اہم قدم ہے۔

پیرس کلب نے کہا ہے کہ یہ قدم اپنی معیشت کو مستحکم کرنے اور غربت کم کرنے کےلیے افغانستان کی کوششوں کے اعتراف میں اُٹھایا گیا ہے۔

امریکہ کے محکمہٴ خزانہ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ افغان حکومت کو ورثے میں جو اندازاً 11 ارب 60 کروڑ ڈالر کے واجب الادا قرضے ملے تھے ، وہ اب تقریباّ 96 فیصد کم ہوگئے ہیں۔

XS
SM
MD
LG