رسائی کے لنکس

توکل کرمان، امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون


توکل کرمان، امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون

توکل کرمان، امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون

جمعے کے روز نوبیل انعام کی کمیٹی نے ، امن کا نوبیل انعام جیتنے والوں کے ناموں کا اعلان کیا، جن میں یمن سے تعلق رکھنے والی توکل کرمان بھی شامل ہیں۔ وہ یہ عالمی اعزاز حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون ہیں۔

2011ء کا امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے والوں میں لائبیریا کی صدر ایلن جانسن سرلیف اور لائبیریا میں امن کی ایک سرگرم کا رکن لیمن گوبوی بھی شامل ہیں۔
توکل کرمان، امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون

توکل کرمان، امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون

اس سال عالمی اعزاز جیتنے والی تینوں شخصیات خواتین کی ہیں۔اوسلو میں جمعے کے روز انعامی کمیٹی نے ایوارڈ حاصل کرنے والوں کے ناموں کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انہیں یہ انعام خواتین کے تحفظ اور ان کے حقوق کے لیے پرامن جدوجہد کے اعتراف میں دیا جارہاہے۔

کرمان تین بچوں کی ماں ہیں اور ان کا تعلق یمن کے شہر تعیز سے ہے، جو ملک میں اصلاحات کے لیے جاری عوامی تحریک کا ایک اہم مرکز ہے۔ وہ صدر علی عبداللہ صالح کی حکومت کے خلاف مظاہروں میں پیش پیش رہنے والی ایک نمایاں شخصیت ہیں۔

32 سالہ توکل کرمان خاتون صحافیوں کے حقوق کی تنظیم ’ جرنلسٹ ود آؤٹ چینز‘ کی راہنما ہیں۔

کرمان نے نامہ نگاروں سے کہاہے کہ وہ اپنا ’امن کا نوبیل انعام یمن میں انقلاب کے لیے کام کرنے والے نوجوانوں کے نام کررہی ہیں۔

تقریباً 15 لاکھ ڈالر مالیت کے اس انعام میں کرمان کے ساتھ لائبیریا کی صدر ایلن جانسن سرلیف اور لائبریا ہی کی امن کی سرگرم کارکن لیمن گوبوی بھی شریک ہیں۔

72 سالہ ایلن جانسن سرلیف ووٹ کی طاقت سے صدر بننے والی پہلی افریقی خاتون ہیں۔ وہ 2005ء سے اس عہدے پر فائز ہیں۔

لائبیریا سے تعلق رکھنے والی 39 سالہ لیمن گوبوی نے ملک میں خانہ جنگی ختم کرانے کے لیے پرامن جدوجہد کی ۔ انہوں نے مسلمان اور عیسائی خواتین کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہونے میں مدد دی۔

XS
SM
MD
LG