رسائی کے لنکس

امریکہ صدر موگابے کی جماعت کا مخالف نہیں، امریکی سفیر


امریکہ صدر موگابے کی جماعت کا مخالف نہیں، امریکی سفیر

امریکہ صدر موگابے کی جماعت کا مخالف نہیں، امریکی سفیر

زمبابوے میں امریکہ کے سفیر چارلس رے نے کہا ہے کہ ان کا ملک زمبابوے کے صدر رابرٹ موگابے کی جماعت کا مخالف نہیں جس پر امریکہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی کا الزام عائد کرتا آیا ہے۔

امریکہ اور زمبابوے کے باہمی تعلقات کے موضوع پر دارالحکومت ہرارے میں خطاب کرتے ہوئے امریکی سفیر کاکہنا تھا کہ ان کا ملک "زمبابوے میں کسی جماعت کو کسی دوسری جماعت پر ترجیح نہیں دیتا"۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ زمبابوے کی حکمران جماعت "زانو - پی ایف" کا مخالف نہیں ۔ امریکی سفیر نے اپنے خطاب میں زمبابوے کے عوام کی بھلائی کے لیے حکمران جماعت کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات کا بھی اعتراف کیا۔

تاہم انہوں نے واضح کیا کہ ان کا ملک سمجھتا ہے کہ حزبِ مخالف کی سابق جماعت 'موومنٹ آف ڈیموکریٹک چینج' سمیت دیگر جماعتوں کو بھی زمبابوے کے مستقبل میں ایک اہم کردار ادا کرنا ہے۔

سفیر چارلس رے کے بقول امریکہ زمبابوے میں غیر متشدد اور قابلِ اعتبار انتخابات ہوتے دیکھنا چاہتا ہے جس میں عوامی رائے کا احترام کیا جائے۔

واضح رہے کہ امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے انسانی حقوق کی صورتِ حال سے متعلق جاری کی گئی تازہ ترین رپورٹ میں 'زانو – پی ایف' کے حامیوں پر الزام عاِئد کیا گیا تھا کہ انہوں نے اپنے مخالفین کو خوفزدہ کرنے اور ان کی سرگرمیوں کو سبوتاژ کرنے کے لیے مار پٹائی، دھونس دھمکیوں اور گرفتاریوں جیسے اقدامات کا سہارا لیا۔

امریکی سفیر نے مذکورہ بیان زمبابوے کے دارالحکومت میں گزشتہ ہفتے منعقدہ ایک تقریب سے خطاب میں دیا تھا۔ ان کا یہ خطاب رواں ہفتے زمبابوے میں امریکی سفارت خانے کی ویب سائٹ پر جاری کیا گیا ہے۔

XS
SM
MD
LG