پير, ستمبر 01, 2014 مقامی وقت: 19:19

خبریں / آرٹ

زندگی آج تیرا قرض چکا دیتے ہیں: معین اختر کا ایک یادگار انٹرویو

معین اختر نے اپنی زندگی کا یادگار لمحہ وہ دِن بتایا جب اُنھیں ’ستارہٴ امتیاز‘ دیا گیا، کیونکہ یہ اُن کے عزیز ملک کی طرف سے اُن کے فن کا اعتراف تھا

معین اختر
معین اختر
شہناز عزیزواشنگٹن
معین اختر پروگرام ’کچھ تو کہیئے‘ کے بالکل ابتدائی دنوں میں، یعنی 14دسمبر 2008ء کو ہمارے مہمان تھے۔

ہمیشہ کی طرح ہنستے، مسکراتے، حاضر جواب لیکن ساتھ ساتھ وہ متانت اور ناصحانہ انداز بھی جو اُن کی شخصیت کا خاصہ تھا۔

جب کسی نے اُن سےپوچھا کہ اتنے کمال کے حصول کے بعد کوئی شاگرد بھی بنایا، تو معین اختر صاحب نے کہا ’ابھی میں خود سیکھ رہا ہوں، پھر شاگرد بنائیں گے‘۔

اِس سوال کے جواب میں کہ نوجوان فن کاروں میں سے کس میں وہ اپنی جھلک دیکھتے ہیں، معین اختر نے فیصل قاضی کا نام لیا۔ اُن کے الفاظ میں، ’جو میں کرتا ہوں  وہ اس سے بہت نزدیک کام کرتے ہیں۔ اُن میں بہت potentialہے کام کرنے کا‘۔


آڈیو رپورٹ کے لیے کلک کیجیئے:



فن کے آغاز کے بارے میں اُنھوں نے بتایا کہ اسکول کے زمانے میں شیکسپئر کے کھیلMerchant of Veniceمیں شائی لاک کا کردار کیا تھا۔

اپنے یادگار کرداروں میں بہت سے اُن کے پسندیدہ ہیں، مثلاً  گل جی اور کوفی عنان کے کردار اور اِسی طرح ایک نرس کا کردار۔

معین اختر کے سیدھے سادے چاہنے والے اُن کا من موہ لیتے تھے۔ ایسے بہت سے لوگوں نے ہمارے پروگرام میں اُن سے بات کی ۔ اورکزئی سے جب ایک کالر نے بڑی سادگی سے کہا ، ’میں معین صاحب سے کیا پوچھوں! مجھے تو کچھ نہیں آتا!!‘ تو، معین جذباتی ہوگئے اور بولے، ’یہ ہے سادگی اور سچائی‘۔


معین اختر اکیڈمی کا درجہ رکھتے تھےمعین اختر اکیڈمی کا درجہ رکھتے تھے
x
معین اختر اکیڈمی کا درجہ رکھتے تھے
معین اختر اکیڈمی کا درجہ رکھتے تھے



جب بنوں سے ایک لڑکی نے اُن کے لیے شعر پڑھا:

معین ہو جس کا نام،  تو ایسی ہو زندگی
راضی ہوں والدین، خدا اور رسول بھی

تو، معین آبدیدہ ہوگئے اور اُنھوں نے اس بچی کو بہت سی دعائیں دیں۔

مالاکنڈ سے ایک اور طالبہ نے بے ساختہ اُنھیں دعا کی: ’اللہ آپ کو لمبی عمر دے اور سلامت رکھے‘۔

خود معین نے اپنی پسند کا شعر قابل اجمیری کے کلاف سے چنا:

کوئے قاتل میں ہمیں، بڑھ کے صدا دیتے ہیں
زندگی آج تیرا قرض چکا دیتے ہیں

معین اختر نے اپنی زندگی کا یادگار لمحہ وہ دِن بتایا جب اُنھیں ’ستارہٴ امتیاز‘ دیا گیا، کیونکہ یہ اُن کے  عزیز ملک کی طرف سے اُن کے فن کا اعتراف تھا۔

بہر حال، سنہ 2011میں اُنھیں پاکستان کا سب سےبڑا سول اعزاز Pride of Performanceدیا گیا۔
یہ فورم بند کیا جاچکا ہے
تبصرے کی چھانٹی
تبصرے
     
از طرف: معئيىن اخترائيىویىنیىو از طرف: USA
05.08.2012 04:39
جب بنوں سے ایک لڑکی نے ان کے لئے شعرپڑھا -:- معین ہو جس کا نام، تو ایسی ہو زندگی- راضی ہوں والدین، خدا اور رسول بھی -:- آسمان ان کی لحد پر شبنم اشفانی کرے - **معئيىن اخترائيىویىنیىو ** اور مہدی حسن کراچی کی کسی بھی 2 شاہراہوں کا نام رکھ کر مشکور کیجئے تو نوازش ہو گی - از پرستاران فنکاراے وطن USA

آپ کے کمپیوٹر پر جاوا اسکرپٹ غیر موثر ہے یا آپ ایڈوب فلیش پلیئر کا پرانا ورژن استعمال کر ر ہے ہیں۔ < >فلیش پلیئر کا نیا ورژن حاصل کیجئے<>
کہانی پاکستانی - فلوریڈا اِسپیشلi
X
28.08.2014 09:00
اِس قِسط میں عائشه میامی فلوریڈا کی تاریخ، ثقافت، پرکشش مقامات اور دوسرے پهلوؤں پر روشنی ڈالیں گی۔ ساتھ هی ساتھ آپکی ملاقات کروائیں گی وجاہت مالک سے جو فلمیں بناتے هیں۔
Kahani Pakistani.
Kahani Pakistani.

Download mobile app for your iPhone or iPad.
خالد حمید کی یادیں - خالد حمید کی تلاش
Download mobile app for your iPhone or iPad.
Download mobile app for your iPhone or iPad.
Download mobile app for your iPhone or iPad.