رسائی کے لنکس

ڈھاکا: بچوں سے جبری مشقت

بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکا کے ایک نواحی علاقے میں غبارے کی فیکٹری میں نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے۔ ان بچوں سے 12 گھنٹوں سے زیادہ کام لیا جاتا اور اس کے عوض انھیں صرف 150 ٹکہ معاوضہ دیا جاتا ہے جو کہ انتہائی کم ہے۔
مزید

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے
1

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے
2

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے
3

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے
4

نو سال سے کم عمر کے بچوں سے جبری مشقت لی جاتی ہے

مزید لوڈ کریں

XS
SM
MD
LG