رسائی کے لنکس

تصاویر: جرمنی میں انتخابات اور مرخیل کی فتح

آنگیلا مرخیل چوتھی بار جرمنی کی چانسلر منتخب ہوگئی ہیں البتہ ان کی جماعت کو توقعات کے برعکس پارلیمان میں پہلے سے کم نشستیں حاصل ہوئی ہیں۔ انتخابات میں انتہائی دائیں بازو کی جماعت 'الٹرنیٹو فار جرمنی' (اے ایف ڈی) کی غیر متوقع بہتر کارکردگی نے سیاسی حلقوں کو حیران کردیا ہے۔
مزید

آنگیلا مرخیل چوتھی بار جرمنی کی چانسلر منتخب ہوگئی ہے البتہ ان کی جماعت کو توقعات کے برعکس پارلیمان میں پہلے سے کم نشستیں حاصل ہوئی ہیں۔ مرخیل پہلی بار 2005ء میں جرمنی کی پہلی خاتون چانسلر منتخب ہوئی تھیں اور انہیں روئے ارض پر سب سےطاقت ور ترین سیاست دان بھی کہا جاتا رہا ہے۔
1

آنگیلا مرخیل چوتھی بار جرمنی کی چانسلر منتخب ہوگئی ہے البتہ ان کی جماعت کو توقعات کے برعکس پارلیمان میں پہلے سے کم نشستیں حاصل ہوئی ہیں۔ مرخیل پہلی بار 2005ء میں جرمنی کی پہلی خاتون چانسلر منتخب ہوئی تھیں اور انہیں روئے ارض پر سب سےطاقت ور ترین سیاست دان بھی کہا جاتا رہا ہے۔

اتوار کو ہونے والے انتخابات کے نتائج کے مطابق چانسلر مرخیل کی جماعت 'کرسچن ڈیموکریٹک یونین' اور جنوبی ریاست بویریا میں اس کی اتحادی جماعت 'کرسچن سوشل یونین' کو 33 فی صد ووٹ ملے ہیں۔
2

اتوار کو ہونے والے انتخابات کے نتائج کے مطابق چانسلر مرخیل کی جماعت 'کرسچن ڈیموکریٹک یونین' اور جنوبی ریاست بویریا میں اس کی اتحادی جماعت 'کرسچن سوشل یونین' کو 33 فی صد ووٹ ملے ہیں۔

انتخابات سے قبل یہ اندازہ ظاہر کیا جارہا تھا کہ ان دونوں جماعتوں کو 36 سے 39 فی صد ووٹ حاصل ہوں گے۔
3

انتخابات سے قبل یہ اندازہ ظاہر کیا جارہا تھا کہ ان دونوں جماعتوں کو 36 سے 39 فی صد ووٹ حاصل ہوں گے۔

سنہ 1949 کے بعد کرسچن ڈیموکریٹس کو ملنے والے یہ سب سے کم ووٹ ہیں۔ سنہ 2013 کے گزشتہ انتخابات میں چانسلر مرخیل کی جماعت کو 5ء41 فی صد ووٹ ملے تھے۔
4

سنہ 1949 کے بعد کرسچن ڈیموکریٹس کو ملنے والے یہ سب سے کم ووٹ ہیں۔ سنہ 2013 کے گزشتہ انتخابات میں چانسلر مرخیل کی جماعت کو 5ء41 فی صد ووٹ ملے تھے۔

مزید لوڈ کریں

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG