رسائی کے لنکس

عراقی فورسز کا رمادی پر قبضہ بحال

عراق کے اہم شہر رمادی کے وسیع حصے سے فورسز کی طرف سے شدت پسند گروپ داعش کو بے دخل کیے جانے کے بعد حکام کا کہنا ہے کہ اب سنی قبائلی جنگجو یہاں کنٹرول برقرار رکھنے کے لیے فورسز کی معاونت کر رہے ہیں۔
مزید

عراق کے وزیر خزانہ ہوشیار زیباری موصل نے کہا کہ اس شہر کو محفوظ بنانے کے لیے اس کے گرد و نواح میں سنی جنگجوؤں اور ایران کی حمایت یافتہ ملیشیا کی ضرورت ہو گی۔
1

عراق کے وزیر خزانہ ہوشیار زیباری موصل نے کہا کہ اس شہر کو محفوظ بنانے کے لیے اس کے گرد و نواح میں سنی جنگجوؤں اور ایران کی حمایت یافتہ ملیشیا کی ضرورت ہو گی۔

عراقی فورسز کے دستے شہر کے وسط میں واقع صوبائی انتظامیہ کے دفاتر کا محاصرہ کیے ہوئے تھے جہاں داعش کے جنگجووں مورچہ بند تھے۔
2

عراقی فورسز کے دستے شہر کے وسط میں واقع صوبائی انتظامیہ کے دفاتر کا محاصرہ کیے ہوئے تھے جہاں داعش کے جنگجووں مورچہ بند تھے۔

وزیراعظم العبادی نے عزم ظاہر کیا ہے کہ اب اگلا ہدف عراق کے دوسرے بڑے شہر موصل کا قبضہ حاصل کرنا ہے اور وہاں بھی سنیوں کی اکثریت ہے۔
3

وزیراعظم العبادی نے عزم ظاہر کیا ہے کہ اب اگلا ہدف عراق کے دوسرے بڑے شہر موصل کا قبضہ حاصل کرنا ہے اور وہاں بھی سنیوں کی اکثریت ہے۔

داعش نے یہاں جون 2014ء سے قبضہ کر رکھا ہے اور یہیں سے انھوں نے اپنے تسلط کو مغربی عراق اور شام کے مشرقی علاقوں تک بڑھایا۔
4

داعش نے یہاں جون 2014ء سے قبضہ کر رکھا ہے اور یہیں سے انھوں نے اپنے تسلط کو مغربی عراق اور شام کے مشرقی علاقوں تک بڑھایا۔

مزید لوڈ کریں

XS
SM
MD
LG