رسائی کے لنکس

logo-print

ملیشیاء: فضائی آلودگی ’خطرے کی شرح‘ پر پہنچ گئی، ایمرجنسی نافذ


یہ ایمرجنسی انڈونیشیاء کی طرف سے آنے والے دھوئیں کے بادلوں کی وجہ سے نافذ کی گئی ہے جس کے باعث ملیشیاء میں فضائی آلودگی ’خطرے کی سطح‘ تک پہنچ گئی ہے۔

ملیشیاء نے اپنی جنوبی ریاست جوہور کے دو حصوں میں ’ایمرجنسی‘ کا نفاذ کر دیا ہے۔ یہ ایمرجنسی انڈونیشیاء کی طرف سے آنے والے دھوئیں کے بادلوں کی وجہ سے نافذ کی گئی ہے جس کے باعث ملیشیاء میں فضائی آلودگی ’خطرے کی سطح‘ تک پہنچ گئی ہے۔

ملیشیاء میں قدرتی وسائل اور ماحولیات کے وزیر جی پالنیول نے اتوار کے روز ایک بیان میں کہا کہ ایمرجنسی کے نفاذ کا حکم، ملیشیاء میں گذشتہ 16 برسوں میں فضائی آلودگی کی ریکارڈ سطح تک آنے کے بعد صادر کیا گیا۔

اس سے قبل سنگاپور میں بھی فضائی آلودگی گذشتہ جمعے سے لے کر اتوار یعنی تیسرے دن تک ریکارڈ ترین درجے پر نوٹ کی گئی۔

انڈونیشیاء نے ہنگامی بنیادوں پر جنگلات میں لگی آگ پر قابو پانے کے لیے ہیلی کاپٹرز کا انتظام کیا ہے تاکہ آگ کے شعلوں پر بارش برسائی جا سکے۔

سنگاپور کے وزیر ِ اعظم لی لُونگ نے گذشتہ جمعرات کو ایک بیان میں کہا تھا کہ سنگاپور میں فضا میں آلودگی بڑھنے کا سلسلہ انڈونیشیاء کے سماٹرا جزیرے پر خشک موسم ختم ہونے یعنی ستمبر یا اکتوبر تک جاری رہ سکتا ہے۔

سنگاپور میں ’نیشنل انوائرمنٹ ایجنسی‘ کے سربراہ اینڈریو ٹین نے انڈونیشیاء پر زور دیا ہے کہ وہ ان کمپنیوں کے خلاف ’فیصلہ کن کارروائی‘ کریں جنہوں نے سماٹرا کے جزیرے کو کم خرچ میں صاف کرنے کے چکر میں جنگلات کو آگ لگائی۔
XS
SM
MD
LG