رسائی کے لنکس

مسجد تعمیر کر کے معاشرے میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتے ہیں

خواجہ سراؤں کے حقوق کے لیے آواز بلند کرنے والوں نے اسلام آباد میں ایک مسجد کی تعمیر کا آغاز کیا جس میں ان کے بقول کوئی بھی مسلمان بلا جھجھک داخل ہو کر اپنے مذہبی فرائض ادا کر سکے گا اور یہ اقدام ان سے متعلق سماجی رویوں میں تبدیلی کے لیے بھی ایک کوشش ہے۔ (تحریر و تصاویر: ناصر محمود ناصر)
مزید

خواجہ سراؤں کے حقوق کے لیے آواز بلند کرنے والوں نے اسلام آباد میں ایک مسجد کی تعمیر کا آغاز کیا ہے۔
1

خواجہ سراؤں کے حقوق کے لیے آواز بلند کرنے والوں نے اسلام آباد میں ایک مسجد کی تعمیر کا آغاز کیا ہے۔

خواجہ سراؤں کے حقوق کے بقول کوئی بھی مسلمان بلا جھجھک مسجد میں داخل ہو کر اپنے مذہبی فرائض ادا کر سکے گا۔
2

خواجہ سراؤں کے حقوق کے بقول کوئی بھی مسلمان بلا جھجھک مسجد میں داخل ہو کر اپنے مذہبی فرائض ادا کر سکے گا۔

مسجد کی تعمیر کے لیے وسائل جمع کرنے میں انھیں دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔
3

مسجد کی تعمیر کے لیے وسائل جمع کرنے میں انھیں دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

تمام خواجہ سرا اپنے اپنے طور پر اس مسجد کی تعمیر میں حصہ ڈال رہے ہیں۔
4

تمام خواجہ سرا اپنے اپنے طور پر اس مسجد کی تعمیر میں حصہ ڈال رہے ہیں۔

مزید لوڈ کریں

XS
SM
MD
LG