رسائی کے لنکس

آفتاب شیرپاؤ خودکش بم حملے میں محفوظ


فائل فوٹو

فائل فوٹو

خودکش بمبار کے جسم سے بندھے بارودی مواد میں دھماکے سے ایک پولیس اہلکار ہلاک جب کہ قریب موجود کچھ افراد زخمی ہو گئے۔

پاکستان کی ایک سیاسی جماعت قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب شیرپاؤ کے قافلے کو خودکش بمبار نے نشانہ بنایا تاہم آفتاب شیرپاؤ اس میں محفوظ رہے۔

آفتاب شیرپاؤ چارسدہ ایک جلسے سے خطاب کے بعد واپس جا رہے تھے کہ ایک مشتبہ شخص اُن کی جانب بڑھا جسے پولیس نے رکنے کا اشارہ کیا، لیکن جب اُس نے دوڑ کر آفتاب شیرپاؤ تک پہنچنے کی کوشش کی تو پولیس اہلکاروں نے اُس پر فائرنگ کر دی۔

تاہم خودکش بمبار کے جسم سے بندھے بارودی مواد میں دھماکے سے ایک پولیس اہلکار ہلاک جب کہ قریب موجود کچھ افراد زخمی ہو گئے۔

آفتاب شیرپاؤ کے بیٹے اور سابق صوبائی وزیر سکندر شیرپاؤ نے وائس آف امریکہ سے گفتگو میں کہا کہ ابتدائی اطلاعات کے مطابق اس کارروائی میں دو حملہ آوروں نے حصہ لیا۔

آفتاب شیرپاؤ کو اس سے قبل بھی کئی مرتبہ خودکش بمباروں نے نشانہ بنانے کی کوشش کی تاہم وہ اُن حملوں میں محفوظ رہے۔

آفتاب شیرپاؤ سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے دور حکومت میں وزیر داخلہ رہ چکے ہیں۔

XS
SM
MD
LG