رسائی کے لنکس

logo-print

حقانی نیٹ ورک سے متعلق دعوؤں کی تردید


فوجی ترجمان نے اس دعوے کو بھی قطعی طور پر غلط قرار دیا کہ امریکہ سمجھتا ہے کہ افغانستان کے لیے مستقبل کے حکومتی ڈھانچے میں حقانی نیٹ ورک کا اہم کردار ہو گا۔

امریکہ نے پاکستان کے بعض اخبارات میں شائع ہونے والی ان اطلاعات کی تردید کی ہے کہ وہ افغانستان میں متحرک عسکریت پسندوں کےساتھ ہونے والی مصالحت کی رو سے ملک کے مشرقی صوبوں، خوست، پکتیا اور پکتیکا کا انتظام حقانی نیٹ ورک کے حوالے کرنے پر رضا مند ہے۔

امریکی فوج کے ترجمان برگیڈیئر ٹوئٹی کا تردیدی بیان اسلام آباد میں امریکی سفارت خانے نے پیر کو جاری کیا ہے۔

فوجی ترجمان نے اس دعوے کو بھی قطعی طور پر غلط قرار دیا کہ امریکہ سمجھتا ہے کہ افغانستان کے لیے مستقبل کے حکومتی ڈھانچے میں حقانی نیٹ ورک کا اہم کردار ہو گا۔

’’ایک اعلیٰ امریکی فوجی عہدیدار سے منسوب یہ بیان امریکہ کی پالیسی سے مطابقت نہیں رکھتا۔ مزید برآں صرف اسلامی جمہوریہ افغانستان کی حکومت افغان عوام کی جانب سے سیاسی اقدامات کرنے کی مجاز ہے۔‘‘

آپ کی رائے

تبصرے دکھائیں

XS
SM
MD
LG