رسائی کے لنکس

logo-print

یاسر عرفات کی موت کا سبب جانے کے لیے قبرکشائی


یاسر عرفات کی قد آدم تصویر

حکام کا کہنا ہے باقیات نکالنے کا مقصد سابق فلسطینی رہنما کی موت کی تحقیقات کے سلسلے میں سائنسدانوں کو نمونے فراہم کرنا ہے۔

فلسطین کے سابق رہنما یاسر عرفات کی موت کا سبب جاننے کے لیے آئندہ منگل کو قبر کشائی کر کے ان کی باقیات نکالی جائیں گی

حکام کا کہنا ہے کہ اس اقدام کا مقصد سابق رہنما کی موت کی تحقیقات کے سلسلے میں سائنسدانوں کو باقیات کے نمونے فراہم کرنا ہے۔ ان کے بقول دوبارہ تد فین منگل کو ہی کر دی جائے گی۔

سوئس طبیعاتی لیبارٹی کی طرف سے یاسر عرفات کے زیر استعمال چیزوں میں پولونیم (ایک تابکارہ مادہ) کے شواہد ملنے کے بعد رواں سال فرانس میں استغاثہ نے عرفات کی موت کی تحقیقات شروع کی تھیں۔

تاہم لیبارٹری کا کہنا ہے کہ موت کے وقت یاسر عرفات کی طبی علامات سے غیر واضح تھیں۔

فلسطینی رہنما اور نوبل انعام یافتہ یاسر عرفات 2004ء میں پیرس کے قریب ایک فوجی اسپتال میں 75 سال میں عمر میں انتقال کر گئے تھے۔ علالت کے باعث فرانس منتقلی سے قبل فلسطینی شہر رملہ میں مغربی کنارے کے علاقے میں یاسر عرفات کو اسرائیل فوج نے دو سال سے زائد عرصے کے محدود کیے رکھا تھا۔

پیرس میں ان کا علاج کرنے والے ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ وہ یاسر عرفات کی موت کی وجہ کا تعین نہیں کر سکے۔

عرفات کی بیوہ سوہا نے بھی تصدیق کی ہے کہ رملہ میں فلسطینی صدارتی ہیڈ کوارٹر میں واقع مزار سے ان کے شوہر کی لاش کو نکالا جائے گا۔
XS
SM
MD
LG