رسائی کے لنکس

logo-print

فیس بک کا کرونا وائرس سے متعلق گمراہ کن اشتہارات پر پابندی کا فیصلہ


(فائل فوٹو)

سماجی رابطوں کی امریکی ویب سائٹ فیس بک نے کرونا وائرس کے علاج یا اس پر کنٹرول سے متعلق معلومات اور مصنوعات کی تشہیر پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

فیس بک انتظامیہ کے مطابق غیر مصدقہ معلومات عوام کے لیے گمراہ کن ثابت ہو سکتی ہیں۔ لہٰذا ان کی تشہیر پر پابندی لگائی جا سکتی ہے۔ تاہم کمپنی کی جانب سے یہ نہیں بتایا گیا کہ پابندی پر عمل درآمد کب سے شروع ہو گا۔

برطانوی خبر رساں ادارے 'رائٹرز' کے مطابق کمپنی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ فیس بک کی کرونا وائرس کی تشہیر سے متعلق سخت پالیسی کے تحت ایسے اشتہارات بھی فیس بک پر شائع نہیں ہو سکیں گے جن میں "ماسک کے استعمال سے وائرس کا پھیلاؤ روکنے کی 100 فی صد ضمانت" جیسے الفاظ درج ہوں۔

سوشل میڈیا کمپنی کا یہ اعلان اس تناظر میں سامنے آیا ہے جب اسے اپنے پلیٹ فارم پر شائع کردہ مواد کی باقاعدگی سے جانچ پڑتال کرنا پڑ رہی ہے۔

گزشتہ ماہ فیس بک انتظامیہ نے کہا تھا کہ وہ کرونا وائرس سے متعلق ایسے تمام مواد کو ویب سائٹس سے حذف کر دیں گے جن کی نشاندہی عالمی ادارہ صحت سے وابستہ معروف تنظیموں اور مقامی محکمہ صحت کے حکام نے کی ہے۔

دونوں اداروں کی جانب سے کرونا وائرس سے متعلق دعوؤں کو جھوٹا اور نظریات کو جعلی قرار دیا گیا تھا۔

خیال رہے کرونا وائرس گزشتہ سال دسمبر میں چین کے وسطی شہر ووہان سے پھیلنا شروع ہوا تھا جس نے اب تک دنیا کے کئی ممالک کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ چین میں اس مرض سے اب تک 2700 سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG