رسائی کے لنکس

logo-print

ہانگ کانگ میں جمہوریت نوازوں نے نشتیں پھر جیت لیں


ہانگ کانگ میں رائے دہندگان نے پانچ جمہوریت نوازوں کو ضمنی انتخابات میں ووٹ دے کر کامیاب کردیا ہے اور اب انہیں اپنی پرانی نشیتیں واپس مل گئی ہیں، اگرچہ ووٹ ڈالنےکے لیے کم ہی لوگ آئے تھے۔ حکام کے مطابق 17 فی صد لوگ ووٹ ڈالنے پہنچے تھے جب کہ وہاں رائے دہندگان کی تعداد تین اعشاریہ چار ملین یعنی تین کروڑ چالیس لاکھ ہے۔

حکومت نواز جماعتوں نے اس انتخاب کا بائی کاٹ کیا تھا اس لیے یہ امیدوار بغیر کسی مشکل مقابلے کے پھر سے منتخب ہو گئے۔

پانچ جمہوریت پسند قانون ساز، جن کے استعفوں سے ضمنی انتخابات کرانا پڑے تھے، دوبارہ اپنی نشتوں کے لیے انتخاب لڑ کر کامیاب ہوئےہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ضمنی انتخابات دارصل ان کی مہم پر استصواب ِرائے ہے تاکہ بیجنگ پر دباؤ ڈالا جا سکے کہ ہانگ کانگ میں مکمل جمہوریت نافذ کی جائے۔
بیجنگ نے جمہوریت پسند قانون سازوں کے استصوابِ رائے کے منصوبے کو یہ کہہ کر رد کر دیا ہے کہ ایسا کرنا چین کے اثر و نفوذ کو کم کرنے کی کوشش ہے۔
بیجنگ نواز جماعتوں نے ضمنی انتخابات کا بائی کاٹ کیا تھا اور کہا تھا کہ یہ ٹیکس گذاروں کی رقم ضائع کرنے کے مترادف ہے۔

XS
SM
MD
LG