رسائی کے لنکس

بھارت میں شدید گرمی، ہلاکتوں کی تعداد 1000 سے زائد ہو گئی

بھارت میں حالیہ شدید گرمی کی لہر سے مرنے والوں کی تعداد ایک ہزار سے تجاوز کر گئی ہے اور ماہرین نے پیش گوئی کی ہے کہ موسم کی یہ شدت آنے والے دنوں میں بھی برقرار رہے گی۔ سب سے زیادہ متاثر ہونے والے علاقوں میں جنوبی ریاست آندھرا پردیش اور تلنگانا شامل ہیں جہاں محکمہ موسمیات کے مطابق درجہ حرارت میں مزید اضافے کی توقع ہے۔
مزید

جنوب مشرقی ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا کے حکام کے مطابق مرنے والوں کی بڑی تعداد بے گھر افراد پر مشتمل ہے۔
1

جنوب مشرقی ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا کے حکام کے مطابق مرنے والوں کی بڑی تعداد بے گھر افراد پر مشتمل ہے۔

شدید گرمی سے پیٹ میں خرابی، سر درد، بخار، دھوپ سے جلد پر دھبے اور الرجی کی کم خطرناک علامات بھی ظاہر ہو سکتی ہیں۔
2

شدید گرمی سے پیٹ میں خرابی، سر درد، بخار، دھوپ سے جلد پر دھبے اور الرجی کی کم خطرناک علامات بھی ظاہر ہو سکتی ہیں۔

بھارت میں مئی اور جون سال کے گرم ترین مہینے ہوتے ہیں جن میں عموماً درجہ حرارت 42 سے 47 درجے سینٹی گریڈ تک رہتا ہے۔
3

بھارت میں مئی اور جون سال کے گرم ترین مہینے ہوتے ہیں جن میں عموماً درجہ حرارت 42 سے 47 درجے سینٹی گریڈ تک رہتا ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق شدید گرمی میں زیادہ وقت گزارنے سے صحت پر بُرا اثر پڑتا ہے۔
4

طبی ماہرین کے مطابق شدید گرمی میں زیادہ وقت گزارنے سے صحت پر بُرا اثر پڑتا ہے۔

مزید لوڈ کریں

XS
SM
MD
LG