رسائی کے لنکس

خاتون کے بیان کے مطابق وہ وکاس کو پچھلے چند ماہ سے جانتی ہے۔ اتوار کی شب میں وہ یہ کہہ کر جنوبی دہلی کے منیرکا میں واقع اس کے مکان سے اسے لایا تھا کہ اس کے ایک دوست کے گھر میں پارٹی ہے۔

سہیل انجم

دارالحکومت دہلی میں خواتین کے ساتھ زیادتی کا ایک اور خوفناک واقعہ پیش آیا ہے جس میں مشرقی دہلی کے پانڈو نگر علاقے میں پانچ افراد نے ایک 26 سالہ خاتون کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی اور اسے برہنہ کرکے ایک فلیٹ میں بند کر دیا۔ عورت نے پیر کی صبح کو ساڑھے پانچ بجے مکان کی پہلی منزل کی بالکنی سے عریاں حالت میں چھلانگ لگا دی تاکہ وہ خود کو اذیت سے بچا سکے۔

اس کی شکایت پر پولیس نے رپورٹ درج کی اور پانچوں ملزموں کو جائے واردات سے گرفتار کر لیا۔ عورت دو بچوں کی ماں ہے اور مطلقہ ہے۔ وہ نیپال کی شہری ہے اور یومیہ بنیاد پر کام کرتی ہے۔

جائے واردات کے پاس سے پولیس کو ایک سی سی ٹی وی فوٹیج ہاتھ لگی ہے۔ 17 سکینڈ کے اس فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک عمارت کے باہر دو افراد کھڑے ہیں اور پہلی منزل کی بالکنی کی طرف دیکھ رہے ہیں۔ عورت بالکنی سے چھلانگ لگاتی اور سیڑھیوں پر گرتی نظر آتی ہے۔ ایک شخص کھڑے ہونے میں اس کی مدد کرتا ہے جبکہ دوسرا سڑک پار کرکے چلا جاتا ہے۔

وہ عورت ایک راہگیر سے مدد مانگتی ہے۔ دو کاریں وہاں آکر چند سیکنڈ کے لیے رکتی ہیں اور بغیر کوئی مدد کیے گزر جاتی ہیں۔ اس کے بعد عورت ایک آٹو رکشہ رکواتی ہے اور اس میں بیٹھ کر نکل جاتی ہے۔

اسی اثنا میں ایک شخص پولیس کنٹرول روم کو فون کرتا ہے اور پولیس ٹیم آکر آٹو رکشہ پکڑ لیتی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ اسی درمیان پڑوس کی ایک عورت اسے کچھ کپڑے دیتی ہے۔ عورت کو چونکہ پیر میں ہلکی سی چوٹ لگی تھی اس لیے اسے لال بہادر شاستری اسپتال لے جایا جاتا ہے۔

خواتین کے حقوق کے لیے سرگرم ایک کارکن شیبہ اسلم فہمی نے وائس آف امریکہ سے بات چیت میں کہا کہ یہ صرف نظم و نسق اور قانون کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ ضرورت اس بات کی ہے کہ حکومت ایسے واقعات کے تعلق سے اپنے رویے میں تبدیلی لائے۔ انھوں نے کہا کہ بہت سے پولیس والوں پر بھی عورتوں کے ساتھ زیادتی کے الزام عائد ہوتے ہیں لیکن آج تک کسی پولیس والے کے خلاف کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔

پانچوں ملزمو ں کے نام لکشیہ، وکاس، نوین، سورِت اور پرتیک ہیں۔ ان میں سے چار نوئیڈا میں ایک کال سینٹر میں کام کرتے ہیں اور ایک ٹیک مہیندرا میں ملازم ہے۔

خاتون کے بیان کے مطابق وہ وکاس کو پچھلے چند ماہ سے جانتی ہے۔ اتوار کی شب میں وہ یہ کہہ کر جنوبی دہلی کے منیرکا میں واقع اس کے مکان سے اسے لایا تھا کہ اس کے ایک دوست کے گھر میں پارٹی ہے۔

راستے میں ان سے دو افراد اور ملتے ہیں۔ وہ تینوں اسے پانڈو نگر کے ایک فلیٹ میں لے جاتے ہیں جہا ں پہلے سے ہی دو افراد موجود ہوتے ہیں۔ انھوں نے اسے شراب پلائی اور اس کے ساتھ بار ی باری زیادتی کی۔ عورت نے بتایا کہ اسے دھمکی دی گئی تھی کہ وہ شور نہ مچائے۔

ادھر ملزموں نے جنھیں جیل بھیج دیا گیا ہے یہ دعویٰ کیا ہے کہ انھوں نے عورت کو پانچ ہزار روپے دیے تھے اور اسے ہولی پارٹی کے لیے لایا گیا تھا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG