رسائی کے لنکس

نیلسن منڈیلا کے انتقال پر سوگ، عالمی رہنماؤں کا خراج عقیدت

جنوبی افریقہ کے پہلے سیاہ فام صدر نیلسن منڈیلا 95 برس کی عمر میں جمعرات کو جوہانسبرگ میں انتقال کر گئے۔ نسلی امتیاز کے خلاف جدوجہد کی علامت سمجھے جانے والے نیلسن منڈیلا پھیپھڑوں کی انفیکشن کے باعث طویل عرصے سے شدید علیل تھے۔ نیلسن منڈیلا کو محبت اور احترام سے’مدیبا‘ کے نام سے بھی پکارا جاتا ہے۔ جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوما نے سرکاری طور پر نیلسن منڈیلا کے انتقال کی خبر سناتے ہوئے کہا کہ قوم اپنے عظیم ترین بیٹے سے محروم ہو گئی ہے۔ جنوبی افریقہ کے سابق صدر نیلسن منڈیلا کے انتقال پر عالمی رہنماؤں نے اپنے پیغامات میں انھیں خراج عقیدت پیش کیا ہے۔
مزید

جنوبی افریقہ میں نسلی امتیاز کے خلاف طویل عرصے تک جدوجہد کی علامت، نیلسن منڈیلا 95 برس کی عمر میں جمعرات کو جوہانسبرگ میں انتقال کر گئے۔
1

جنوبی افریقہ میں نسلی امتیاز کے خلاف طویل عرصے تک جدوجہد کی علامت، نیلسن منڈیلا 95 برس کی عمر میں جمعرات کو جوہانسبرگ میں انتقال کر گئے۔

منڈیلا 18جولائی، 1918ء میں جنوبی افریقہ کے قصبے، میزو میں پیدا ہوئے۔
2

منڈیلا 18جولائی، 1918ء میں جنوبی افریقہ کے قصبے، میزو میں پیدا ہوئے۔

نیلسن منڈیلا کو پوری دنیا میں نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کی علامت سمجھا جاتا تھا۔
3

نیلسن منڈیلا کو پوری دنیا میں نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کی علامت سمجھا جاتا تھا۔

نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کے دوران، نیلسن منڈیلا نے 27برس جیل کاٹی۔ باہر آنے پر اُن کا پیغام ’درگزر کرو‘ تھا، جو ایک مثالی نصب العین کا درجہ حاصل کر گیا۔
4

نسل پرستی کے خلاف جدوجہد کے دوران، نیلسن منڈیلا نے 27برس جیل کاٹی۔ باہر آنے پر اُن کا پیغام ’درگزر کرو‘ تھا، جو ایک مثالی نصب العین کا درجہ حاصل کر گیا۔

مزید لوڈ کریں

XS
SM
MD
LG