رسائی کے لنکس

امریکی سفیر کی جنرل قمر باجوہ سے ملاقات


امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل (فائل فوٹو)

پاکستان میں تعینات امریکہ کے سفیر ڈیو ہیل نے پیر کو پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی۔

امریکی سفارت خانے سے جاری بیان کے مطابق سفیر ڈیوڈ ہیل نے عرب اسلامی و امریکی سربراہ کانفرنس میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خطاب کے حوالے سے کہا کہ امریکی صدر نے انتہاپسندی اور دہشت گردی کا قلع قمع کرنے کے لیے امن وسلامتی، خوشحالی اور اتفاق ویگانگت کا تصور پیش کیا۔

بیان کے مطابق سفیر ڈیوڈ ہیل نے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کے کردار کی توثیق کی اور اس مقصد کے لیے دی جانے والی قربانیوں کو سراہا۔

اس موقع پر پاکستانی فوج کے سربراہ نے اس یقین دہانی کو دہرایا کہ پاکستان کسی کو اپنی سرزمین افغانستان کے خلاف حملوں یا اُن کی منصوبہ بندی کے لیے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔

اتوار کو صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں عرب اور دیگر مسلم ممالک کے راہنماؤں سے خطاب میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مسلمان ممالک کے درمیان اتحاد پر زور دیا تھا۔

امریکہ کے صدر نے اپنے خطاب میں ایران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ مشرق وسطیٰ میں عدم استحکام پیدا کر رہا ہے۔

اس سربراہ اجلاس میں پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف بھی شریک تھے۔

ایران کے بارے میں امریکہ کے صدر کے موقف پر پاکستان میں حزب مخالف کی جماعت تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پیر کو اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو میں کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کو سعودی عرب میں یہ کہنا چاہیئے تھا کہ پاکستان یہ نہیں چاہتا کہ ایران کو تنہا کیا جائے اور نا ہی پاکستان کسی بھی ملک کے خلاف فریق بنے گا۔

عمران خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں شامل ہے لیکن امریکہ کے صدر نے ایک اہم اجلاس میں پاکستان کی قربانیوں کو ذکر نہیں کیا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG