رسائی کے لنکس

عمان کے سلطان قابوس انتقال کر گئے


فائل فوٹو

عرب دنیا میں طویل ترین عرصے تک اقتدار میں رہنے والے عمان کے سلطان قابوس بن سید السید 79 برس کی عمر میں طویل علالت کے بعد انتقال کر گئے۔

سلطان کے انتقال پر عمان میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا ہے جبکہ قومی پرچم 40 روز تک سرنگوں رہے گا۔

سلطان قابوس نے 1970 میں اپنے ہی والد کے خلاف برطانیہ کے تعاون سے بغاوت کرتے ہوئے انہیں معزول کر دیا تھا۔ سلطان قابوس کے والد سید بن تیمور کو قدامت پسند رہنما سمجھا جاتا تھا۔

البتہ سلطان قابوس نے تخت نشین ہونے کے بعد عمان کو جدید طرز حکمرانی کی جانب گامزن کرنے کا اعلان کیا تھا۔ ان کے دور میں عمان میں ترقی بھی ہوئی۔

لیکن بعض حلقے انہیں مطلق العنان حکمران بھی قرار دیتے تھے۔ جو مخالفین کی آواز دبانے پر یقین رکھتے تھے۔ 2011 میں 'عرب سپرنگ' کے دوران عمان میں بھی احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے۔

مظاہرین بہتر روزگار، بدعنوانی کے خاتمے سمیت دیگر مطالبات کر رہے تھے۔ تاہم مظاہرین کے خلاف طاقت کا استعمال کیا گیا۔

عمان کے سرکاری خبر رساں ادارے 'او این اے' نے اُن کی موت کی وجہ نہیں بتائی۔ تاہم وہ دسمبر کے آغاز میں بیلجیم میں زیرِ علاج رہے تھے۔

عمان کے شاہی خاندان نے سلطان کے کزن حیشم بن طارق السید کو نیا سلطان نامزد کیا ہے۔

خیال رہے کہ سلطان قابوس نے اپنی زندگی میں ہی اپنے جانشین کے لیے تین نام تجویز کیے تھے۔

عمان کو مشرقِ وسطیٰ اور عرب کے علاقائی تنازعات سے الگ تھلگ رہنے والا ملک سمجھا جاتا تھا۔

عمان کی خارجہ پالیسی کا بنیادی نکتہ بھی یہی ہے کہ وہ علاقائی معاملات میں غیر جانب دار رہے گا۔

امریکی وزیر خارجہ اور سلطان قابوس (فائل فوٹو)
امریکی وزیر خارجہ اور سلطان قابوس (فائل فوٹو)

عالمی رہنماؤن کا اظہار افسوس

سلطان قابوس کے انتقال پر دُنیا کے مختلف عالمی رہنماؤں نے افسوس کا اظہار کیا ہے۔

امریکہ کے سابق صدر جارج بش نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا ہے کہ سلطان قابوس مشرقِ وسطیٰ کی ایک مستحکم قوت تھے۔

جارج بش نے کہا کہ سلطان قابوس دانا اور زیرک رہنما تھے۔

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی سلطان قابوس کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

خبر رساں ادارے 'رائٹرز' کے مطابق سلطان قابوس امریکہ، ایران کشیدگی کم کرانے کے لیے بھی کردار ادا کرتے رہے ہیں۔

دونوں ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات رکھنے والے عمان نے 2013 میں امریکہ اور ایران کے درمیان مذاکرات میں بھی ثالثی کی تھی۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG