رسائی کے لنکس

logo-print

کرونا کی وبا کے دوران رواں سال کے آخری سپر مون کے نظارے


ٹوکیو میں سپر مون کا خوب صورت نظارہ

دنیا بھر میں لوگوں نے سال کے آخری سپر مون کے ایسے وقت میں نظارے کیے جب پوری دنیا کو عالمی وبا کرونا وائرس کا سامنا ہے۔ موسم بہار کے باعث اس 'سپر مون' کو فلاور مون کا نام دیا گیا۔

سال 2020 میں لوگوں نے تیسرے اور آخری سپر مون کا نظارہ کیا۔ سپر مون میں چاند زمین کے مزید قریب آ جاتا ہے۔ رات کی تاریکی میں سپر مون آسمان پر روشنی بھر دیتا ہے۔

لندن میں سپر مون کا طلوع
لندن میں سپر مون کا طلوع

یورپ اور ایشیا کے اکثر علاقوں میں بادلوں نے چاند کو اپنی اوٹ میں لیے رکھا تھا جس کے سبب اس کا نظارہ مدھم رہا۔

امریکہ کا مجسمہ آزادی اور سپرمون
امریکہ کا مجسمہ آزادی اور سپرمون

مدھم ہونے کے باوجود ہانگ کانگ سے اسرائیل تک سیکڑوں افراد نے وائرس کے پھیلاؤ کو نظر انداز کرتے ہوئے سڑکوں پر آکر اس کےنظارے کیے۔ ان میں سے بیشتر افراد نے سپرمون کی تصاویر بھی اتاریں۔

ماسکو کے افق پر طلوع ہوتا سپر مون
ماسکو کے افق پر طلوع ہوتا سپر مون

سپر مون کے وقت چاند تھوڑا سا بڑا دکھائی دیتا ہے اور یہ اس وقت ہوتا ہے جب مکمل چاند زمین کے نہایت قریب سے ہو کر گزرتا ہے۔

ماسکو کی فضا میں سپر مون کا دلکش منظر، سپرمون کو پنک مون بھی کہا جاتا ہے
ماسکو کی فضا میں سپر مون کا دلکش منظر، سپرمون کو پنک مون بھی کہا جاتا ہے

جمعرات کی شب ہونے والے سپرمون کے نظارے کو 'پھولوں کا سپرمون' کہا گیا۔

پرازیل میں فضا میں بلند طیارے کے عقب سے جھانکتا سپرمون
پرازیل میں فضا میں بلند طیارے کے عقب سے جھانکتا سپرمون

جمعرات سے پہلے مارچ اور اپریل میں بھی دو مرتبہ سپرمون کے نظارے دنیا نے دیکھے جب کہ سات اور آٹھ مئی کی درمیانی شب ہونے والے سپرمون کا یہ مسلسل تیسرا موقع تھا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG