رسائی کے لنکس

logo-print

واشنگٹن میں سفید فام قوم پرست افراد کی ریلی


واشنگٹن ڈی سی میں پولیس سفید فام قوم پرست مظاہرین کو آگے بڑھنے سے روک رہی ہے

گزشتہ برس ورجینیا کے شہر شارلٹس ول میں ہونے والے پر تشدد نسلی مظاہروں کی برسی کے موقع پر آج امریکہ کے سفید فام قوم پرست افراد دارالحکومت واشنگٹن میں مقامی وقت کے مطابق شام ساڑھے پانچ بجے مظاہرہ کر رہے ہیں۔

’’یونائٹ دا رائٹ 2 ‘‘ سے موسوم یہ ریلی امریکی صدر کی رہائش گاہ وائٹ ہاؤس کے نزدیک لافایت اسکاوائر پر منعقد ہو رہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اس ریلی کے مقام کے قریب ہی ان کے مخالفین کی طرف سے بھی “ ایک بڑا مظاہرہ منعقد کیا جا رہا ہے۔

منتظمین نے اس موقع پر پولیس کی بھاری نفری کو تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ دونوں مظاہروں کے شرکاء میں کسی قسم کے ممکنہ تصادم کو روکا جا سکے۔ گزشتہ برس شارلٹس ول میں سفید فام قوم پرستوں اور اُن کے مخالفین کے مظاہروں کے دوران ہونے والا تصادم پر تشدد شکل اختیار کر گیا تھا اور بہت سے افراد زخمی ہو گئے تھے۔ اس موقع پر ایک سفید فام قوم پرست شخص نے اپنی گاڑی مخالف مظاہرین پر چڑھا دی تھی جس کے نتیجے میں ایک خاتون ہیدر ہیئر ہلاک ہو گئی تھیں۔

اس موقع پر امریکی صدر ٹرمپ نے کہا تھا کہ دونوں فریقین میں کچھ ’بہت اچھے لوگ‘ موجود ہیں۔ اُن کے اس بیان پر دونوں جانب سے تنقید کا ایک سلسلہ شروع ہو گیا تھا۔

آج اتوار کے روز ہونے والی سفید فام قوم پرستوں کی ریلی اور اس کے مخالف لوگوں کا مظاہرہ بڑھتی ہوئی نسلی کشیدگی کے تناظر میں ہو رہا ہے ۔

واشنگٹن ڈی سی میں ان مظاہروں کے ساتھ ساتھ دیگر اجتماع بھی منعقد کئے جا رہے ہیں جن میں شہری حقوق کے معروف کارکن ریورینڈ ال شارپٹن اور گزشتہ برس شارلٹس ول میں ہلاک ہونے والے خاتون ہیدر ہیئر کی والدہ سوزن برو بھی شرکت کریں گی۔

کل ہفتے کے روز شارلٹس ول میں ہیدر ہیئر کی ہلاکت کے مقام پر بھی ایک بڑا مظاہرہ ہوا جس میں مظاہرین نے اس پر تشدد مظاہرے کی برسی سے ایک روز قبل برابر شہری حقوق کے حق میں مظاہرہ کیا۔ اس مظاہرے میں سیکڑوں افراد نے شرکت کی۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG