رسائی کے لنکس

logo-print

خوست میں نیٹو کیمپ پر طالبان کا حملہ پسپا


خوست میں نیٹو کیمپ پر طالبان کا حملہ پسپا

اتحادی افواج اور افغان سکیورٹی فورسز نے ہفتے کو علی الصباح مشرقی افغانستان میں نیٹو کے دو کیمپوں پر طالبان کی طرف سے کیے جانے والے حملے کو پسپا کردیا ہے۔

نیٹو افواج کے مطابق حملہ آوروں نے صوبہ خوست میں چیپمین اور سیلرون نامی کیمپوں پر راکٹوں اور بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا تاہم بھرپور جوابی کارروائی کرکے ایک درجن سے زائد عسکریت پسندوں کو ہلاک اور کچھ کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ان حملوں میں اتحادی افواج اور افغان سکیورٹی فورسز کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا اور نہ ہی کوئی اہلکار زخمی ہوا ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال دسمبر میں نیٹو کے چیپمین کیمپ پر ہونے والے ایک خودکش حملے میں امریکی انٹیلی جنس اداے سی آئی اے کے سات اہلکار ہلاک ہوگئے تھے جو کہ سی آئی اے کی تاریخ کا دوسرا بڑا ہلاکت خیز واقعہ تھا۔

خوست پولیس کے سربراہ عبدالحکیم اسحق زئی کا کہنا ہے کہ پولیس کو سیلرون کیمپ کے باہر سے 14عسکریت پسندوں کی لاشیں ملی ہیں جب کہ پانچ شدت پسندوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

طالبان کے ایک ترجمان مجاہد ذبیح اللہ کا کہنا ہے کہ ان کے تقریباً 30ساتھیوں نے ان کیمپوں پر حملے میں حصہ لیا جن میں کچھ خودکش بمبار بھی شامل تھے۔

XS
SM
MD
LG