رسائی کے لنکس

logo-print

افغانستان کے بارے میں اقوام متحدہ کی تشویش اور انتباہ


جنرل اسمبلی اور سلامتی کونسل کوپیش کی گئی اپنی ایک تازہ رپورٹ میں سیکرٹری جنرل بان گی مون نے متنبہ کیا ہے کہ افغانستان میں سکیورٹی کی صورتحال خراب ہوتی جا رہی ہے اور اگر افغان حکومت اور عالمی برادری نے مل کر اس طرف فوری توجہ نہ دی تو افغانستان میں جاری مشن کی کامیابی خطرے میں پڑ جائے گی۔

ان کی رپورٹ کے مطابق طالبان کی طرف سے خود کش یا دیگر حملوں کی وجہ سے ایک طرف افغان حکومت عام آدمی تک بنیادی ضروریات زندگی پہنچانے میں ناکام ہو رہی ہے تو دوسری طرف عالمی برادری اور غیر سرکاری تنظیموں کی امدادی کوششیں متاثر ہو رہی ہیں۔
گزشتہ برس ہونے والے صدارتی انتخابات پر تنقید کرتے ہوئے بان گی مون نےکہا ہے کہ یہ افغانستان کی حکومت کی ساکھ متاثر کرنے کا باعث بنے ہیں۔ البتہ سیکرٹری جنرل نےاپنی رپورٹ میں زور دیا ہے کہ متنازع نتائج کے باوجود افغان عوام نے نئی حکومت کو قبول کر لیا ہے۔
انہوں نے کہا ہے کہ انتخابی تنازعے کے باوجود افغانستان میں اب تک حاصل کی گئی کامیابیوں کو داؤ پر نہیں لگایا جا سکتا۔ لیکن نظام میں موجود ان خرابیوں پر توجہ دینے کی ضرورت ہے جن کی وجہ سے انتخابی عمل تنازعات کا شکار ہوا ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ امداد دینے والے ممالک افغانستان میں موجودہ وسائل کو مقامی اداروں کو منتقل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جب کہ ضرورت یہ ہے کہ ان وسائل میں اضافہ کیا جائے۔

XS
SM
MD
LG