رسائی کے لنکس

logo-print

امریکی فوج پر نادانستہ طور پر بدعنوانی کے فروغ کا الزام


امریکی فوج پر نادانستہ طور پر بدعنوانی کے فروغ کا الزام

امریکی کانگریس کی ایک تحقیقاتی رپورٹ میں یہ انکشاف کیا گیا ہے کہ افغانستان میں سامانِ رسد لے جانے والے امریکی قافلوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے امریکی ٹیکس دہندگان کے کروڑو ں ڈالرز بالواسطہ طور پر افغان جنگجو کمانڈروں حتیٰ کہ طالبان کو ادا کیے جار ہے ہیں۔

پیر کی شب جاری کی گئی اس تفصیلی رپورٹ کے مطابق امریکی وزارت دفاع کے ساتھ مل کردو اعشاریہ ایک ارب ڈالر کے مال برداری کے معاہدے پر کام کرنے والی افغانستان میں مقیم نجی کمپنیاں ایک ٹرک کے لیے محافظوں کو کئی ہزار ڈالر ادا کر رہی ہیں۔

اس معاہدے کے تحت امریکی افواج کی خدمات اور انھیں درکار اشیاء کا کم از کم70 فیصدافغانستان بھیجا جا رہا ہے۔ کانگریس کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹرک بھیجنے والی کمپنیوں نے فوجی حکام کو اس مسئلے کے بارے میں آگاہ کیا ہے لیکن اس پر کبھی بھی مناسب کارروائی نہیں کی گئی۔

یہ تحقیقاتی رپورٹ امریکی کانگریس کے ایوان نمائندگان کی قومی سلامتی کی ذیلی کمیٹی نے تیار کی ہے جو منگل کو اس کی سماعت کرے گی۔

امریکی فوج کا کہنا ہے کہ اس نے افغانستان میں بدعنوانی کی اطلاعات کی تفتیش شروع کر دی ہے اور ایک خصوصی ٹاسک فورس بھی تشکیل دی ہے جو اس بات کا پتہ لگائے گی کہ ٹھیکے دینے کے عمل پربدعنوانی کے کیا اثرات ہیں۔

XS
SM
MD
LG