رسائی کے لنکس

logo-print

القاعدہ کے مالی معاون پہ ایک کروڑ ڈالر انعام مقرر


القاعدہ کے مالی معاون پہ ایک کروڑ ڈالر انعام مقرر

امریکی اہلکار کا کہنا تھا کہ الصوری القاعدہ اور ایرانی حکومت کے درمیان موجود مفاہمت کے تحت کام کرتا ہے اور دہشت گردی کے لیے بھرتی کیے گئے افراد کو ایران کے راستے افغانستان اور پاکستان میں موجود القاعدہ رہنماؤں تک پہنچاتا رہا ہے

امریکہ نے مبینہ طور پر ایران میں روپوش القاعدہ کے ایک مالی معاون کے بارے میں اطلاع فراہم کرنے پہ ایک کروڑ ڈالر انعام کا اعلان کیا ہے۔

امریکی محکمہٴ خارجہ کے ایک اہلکار رابرٹ ہرٹنگ کا کہنا ہے کہ یسین الصوری، جسے عزالدین عبدالعزیز خلیل کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، ایران سے رقوم اور دیگر وسائل کی پڑوسی ممالک میں موجود القاعدہ رہنماؤں کو فراہمی میں مدد دیتا رہا ہے۔

جمعرات کو واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے امریکی محکمہ خارجہ کے اہلکار نے بتایا کہ یہ پہلا موقع ہے جب امریکہ نے دہشت گردوں کو مالی معاونت فراہم کرنے والے کسی فرد کے بارے میں اطلاع فراہم کرنے پہ انعام مقرر کیا ہے۔

امریکی اہلکار کا کہنا تھا کہ الصوری القاعدہ اور ایرانی حکومت کے درمیان موجود مفاہمت کے تحت کام کرتا ہے اور دہشت گردی کے لیے بھرتی کیے گئے افراد کو ایران کے راستے افغانستان اور پاکستان میں موجود القاعدہ رہنماؤں تک پہنچاتا رہا ہے۔

ہرٹنگ کے بقول القاعدہ کے مبینہ مالی معاون نے تنظیم کے کئی اراکین کو ایران کی جیلوں سے رہا کرا کے پاکستان روانہ کیا جب کہ افغانستان اور عراق کی القاعدہ قیادت کو بھی بڑی بڑی رقوم منتقل کیں۔

XS
SM
MD
LG