رسائی کے لنکس

logo-print

زخمی پولیس افسران کی مدد کے بجائے ان کی ویڈیو بنانے والے آسٹریلوی شہری کو قید کی سزا


پولیس افسران کی ویڈیو بنانے والے شخص کو دس ماہ کی سزا ئے قید دینے کا واقعہ میلبورن، آسٹریلیا میں پیش آیا

آسٹریلیا کے شہر میلبورن میں ایک تیز رفتار ڈرائیور کو ایک جج نے ’’سنگ دلی، ظلم اور تحقیر آمیز رویے‘‘ کی بنیاد پر دس ماہ قید کی سزا سنائی ہے۔

رچرڈ پوزی نامی 42 برس کے مورگیج بروکر پر الزام تھا کہ ایک ٹرک سے ٹکر کے بعد زخمی ہونے والے 4 پولیس افسران کی مدد کے بجائے وہ ان کی ویڈیو بنانے میں مصروف رہے۔یہ پولیس آفیسر زخموں کی تاب نہ لا کر ہلاک ہو گئے تھے۔

اس سے پہلے وہ وکٹوریا سٹیٹ کاؤنٹی میں حادثے کے وقت ویڈیو کے دوران نازیبا کمنٹری کر کے عوامی شائستگی کے قانون کی خلاف ورزی کا اقرار کر چکے ہیں۔ آسٹریلیا میں 1963 کے بعد شائستگی کے سلوک کی خلاف ورزی کے قانون کا اجرا کیا گیا ہے۔

انہوں نے اس جرم کا بھی اقرار کیا کہ ان کے رویے کی وجہ سے دوسرے لوگوں کی جانوں کو خطرہ لاحق ہوا۔ اس جرم کی سزا آسٹریلیا میں 5 برس ہے۔

خبر رساں ایجنسی اے پی کے مطابق مقامی جج ٹریور ریٹ نے رچرڈ پوزی کو 10 ماہ کی سزا سنائی۔ وہ واقعے کے بعد سے اتنا وقت پہلے ہی جیل میں گزار چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پچھلے برس اپریل میں ملبورن کی ایسٹرن فری وے میں پولیس نے رچرڈ پوزی کو 149 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گاڑی چلانے پر روکا۔ پولیس ان کی سپورٹس کار کو ضبط کرنے کا ارادہ رکھتی تھی، کیونکہ انہوں نے 100 کلومیٹر فی گھنٹہ کی حد سے کہیں زیادہ رفتار سے گاڑی چلائی تھی۔

اس دوران رچرڈ پوزی گاڑی سے دور کھڑے تھے کہ ایک ٹرک ڈرائیور نے ان آفیسرز، رچرڈ پوزی کی پورشے کار، اور پولیس کی گاڑیوں سے اپنا ٹرک ٹکرا دیا۔

رچرڈ پوزی اس حادثے میں محفوظ رہے۔ انہوں نے شدید زخمی ہونے والے افسران کی مدد کرنے کی بجائے ان کی ویڈیو بنانا شروع کر دی۔

انہوں نے اپنی ویڈیو میں واقعے پر کمنٹری کرتے ہوئے نازیبا گفتگو بھی جاری رکھی جس میں واقعے کو انصاف سے تعبیر کرنا، ''بہت ہی شاندار'' اور ''خوبصورت'' جیسے کلمات ادا کرنا بھی شامل تھا۔

ویڈیو میں وہ کہتے سنائی دیتے ہیں کہ ’’لگتا ہے یہاں تو صفایا ہوگیا ہے۔ مجھے اب اوبر لے کر ہی گھر جانا پڑے گا۔‘‘

اے پی کے مطابق جب قریب ہی کھڑے ایک راہ گیر نے ان پولیس افسران کی مدد کرتے ہوئے رچرڈ پوزی سے مدد مانگی تو انہوں نے کہا کہ ’’یہ تو مرنے ہی والے ہیں۔‘‘ اس کے بعد انہوں نے اپنی ویڈیو بنانے کا عمل جاری رکھا۔

جج ریٹ نے رچرڈ پوزی کے رویے کو غیر ذمہ دارانہ اور قابل ملامت قرار دیا۔ انہوں نے رچرڈ پوزی سے مخاطب ہو کر کہا کہ ’’تمہارا رویہ سنگ دلی پر مبنی، ظلم اور تحقیر آمیز تھا۔‘‘

رچرڈ پوزی نے اس کے علاوہ ڈرائیونگ کے دوران منشیات کے استعمال کا بھی اقرار کیا تھا۔ انہیں پولیس نے روک کر 1 ہزار آسٹریلوی ڈالر کا جرمانہ اور دو سال کے لیے ڈرائیونگ کے لیے نااہل قرار دیا تھا۔

دو ہفتے پہلے اپنے ٹرک سے ٹکر مار کر 4 پولیس افسران کو ہلاک کرنے کے الزام میں ٹرک ڈرائیور مہندر سنگھ کو 22 برس کی قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

XS
SM
MD
LG