رسائی کے لنکس

logo-print

غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے الزام میں شاہ زین بگٹی گرفتار


غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے الزام میں شاہ زین بگٹی گرفتار

فرنٹئیر کور کے ایک تر جمان نے بتایا کہ بلوچستان کے سابق گورنر نواب اکبر خان بگٹی کے پوتے اور جمہوری وطن پارٹی بلوچستان کے صدر شاہ زین بگٹی کو چمن سے کو ئٹہ جاتے ہوئے بلیلی چیک پوسٹ پر غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے الزام میں سترہ مسلح محافظوں سمیت حراست میں لے لیا گیا ہے۔

شاہ زین بگٹی (فائل فوٹو)
شاہ زین بگٹی (فائل فوٹو)

ترجمان نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ سولہ گاڑیوں پرمشتمل شازین بگٹی کے قافلے کو بدھ کے روز جب ایف سی کے اہلکاروں نے روکا تو جمہوری وطن پارٹی کے صدر کے محافظوں نے مزاحمت کی کوشش کی لیکن اہلکاروں نے اُن سے اسلحہ چھین لیا۔ حکام کے مطابق قافلے میں شامل گاڑیوں کی تلاشی کے دوران 43کلاشنکوف، 45 ہزار گولیاں، دو راکٹ لانچر، دو اینٹی ایئر کرافٹ گنز ، تین مشین گنز اور بڑی مقدار میں گولہ بارود برآمد کیا گیا۔

بلوچستان پولیس کے سربراہ ملک محمد اقبال نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بتایا کہ شاہ زین بگٹی کے قافلے میں شامل گاڑیوں سے برآمد ہونے والے اسلحہ کے قانونی یا غیر قانونی ہونے کی تحقیقا ت کی جارہی ہیں۔

کوئٹہ میں جمہور ی وطن پارٹی کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ شاہ زین بگٹی کے محافظوں کے پاس اسلحہ قانونی تھا۔ تر جمان نےغیر قانونی اسلحہ کی برآمدگی کے دعویٰ کو غلط قرار دیا اور الزام لگایا کہ بلیلی چیک پوسٹ پر تعینات ایف سی کے اہلکاروں نے تلخ کلامی کے بعد شاہ زین بگٹی کے سر پر بندوق کے بٹ مارا جس سے وہ زخمی ہو گئے لیکن فرنیٹئیر کورنے ان الزامات کی تردید کی ہے۔

XS
SM
MD
LG