رسائی کے لنکس

logo-print

برطانیہ: طبی بنیاد پر بیوی کے قاتل کی جنوبی افریقہ منتقلی معطل


برطانیہ کی ہائی کورٹ نے کہاہے کہ ایک کاروباری شخص ، جس پر یہ الزام ہے کہ اس نے جنوبی افریقہ میں ہنی مون کے دوران اپنی دلہن کو قتل کرنے کے لیے ایک کرائے کے قاتل کی خدمات حاصل کی تھیں، اس کی ذہنی حالت اس قابل نہیں ہے کہ مقدمہ چلانے کے لیے اسے جنوبی افریقہ بھیج دیا جائے۔

ہائی کورٹ بینچ کے دو ججوں نے شرین دیوانی کو اس بنیاد پر جنوبی افریقہ بھجوانے کا عمل عارضی طورپر روک دیا ہے کہ ابھی اس کی دماغی حالت کافی خراب ہے۔

پراسیکیوٹرز کا کہناہے کہ مذکورہ شخص نے نومبر 2010ء میں کیپ ٹاؤن سے باہر ایک غریب علاقے میں اپنی بیوی اینی کو قتل کرانے کا منصوبہ بنایا تھا۔

دیوانی اپنے بیوی کے قتل میں کسی بھی طرح ملوث ہونے سے انکار کیا ہے لیکن ٹیکسی ڈرائیور زولا ٹونگو ، جو قتل کے جرم میں کردار ادارکرنے کا اعتراف کرچکاہے، کہا ہے کہ دیوانی نے کار چھیننے کے واقعہ میں اپنی بیوی کوقتل کرائے جانے کا انتظام کیاتھا۔

دیوانی کی بیوی ٹیکسی کے اندر مردہ پائی گئی تھی اور اسے گولی مار کر ہلاک کیا گیاتھا۔ اس واقع کے ایک روز بعد دیوانی نے حکام کو بتایا کہ کارچھیننے والے اس کی بیوی کو بھی ساتھ لے گئے تھے۔ لیکن انہوں نے ٹیکسی ڈرائیور اور اسے گاڑی سے باہر پھینک دیا تھا۔

ٹیکسی ڈرائیو اس مقدمے میں 18 سال قید کی سزا کاٹ رہاہے۔

XS
SM
MD
LG