رسائی کے لنکس

logo-print

مشرقی برما میں جاری جھڑپوں میں کمی


نقل مکانی کرنے والے برمی باشندے

برما میں حکام کا کہنا ہے کہ فوج نے سرحدی علاقے میں تین روز سے جاری جھڑپوں پر قابو پانے کی کوششوں میں پیش رفت کی ہے جن کے باعث ہزاروں افراد سرحد عبور کرکے تھائی لینڈ نقل مکانی کرنے پر مجبور ہوگئے تھے۔

منگل کو سرحدی علاقے میاوادے میں فائرنگ کے اکا دکا واقعات کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ اس علاقے میں نسلی گروپ کارِن ملیشیا نے اتوار کو ملک میں 20سال بعد ہونے والے انتخابات کے دوران متعدد عمارتوں پر قبضہ کرلیا تھا۔

لیکن برمی حکام نے خبر رساں اداروں کو بتایا ہے کہ انھوں نے زیادہ ترعلاقوں کا کنٹرول حاصل کرلیا ہے اور تھائی حکام کا کہنا ہے کہ وہ تقریباً 20ہزار مہاجرین کو واپس بھیجنے کے لیے اجازت کے منتظر ہیں۔

ان جھڑپوں کا آغاز کارِن ملیشیا سے علیحدہ ہونے والے ڈیموکریٹک کارِن بدھ اسٹ آرمی کی طرف سے کیا گیا تھا اور ان میں تین سے دس افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاعات سامنے آئی تھیں۔

XS
SM
MD
LG