رسائی کے لنکس

logo-print

کراچی میں کار بم دھماکا، کوئی جانی نقصان نہیں ہوا


فائل فوٹو

پاکستان کے جنوبی ساحلی شہر کراچی میں ایک کار بم دھماکے میں تباہ ہو گئی تاہم پولیس کے مطابق اس واقعہ میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔

پولیس کے ایک عہدیدارکے مطابق پیر کو کراچی کے ڈیفنس کے علاقے میں کھڑی گاڑی میں ہونے والے دھماکے میں دیسی ساختہ دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا ہے جس کے نتیجے میں کار مکمل طور پر تباہ ہو گئی ۔

پولیس حکام ابتدائی طور پر اس دھماکے کو گیس سیلینڈر کا دھماکا قرار دیتے رہے تاہم بعد ازاں تحقیقات کے بعد پولیس نے کار میں بارودی مواد کے دھماکے کی تصدیق کر دی ۔

ضلع جنوبی کراچی کے ایس ایس پی انو یسٹی گیشن طارق داریجو نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ کار میں دیسی ساختہ بم سے دھماکا کیا گیا ہے جس میں ان کے بقول 8 سے 10 کلو گرام دھماکہ خیز مواد استعمال ہوا۔

داریجو کے مطابق گاڑی سے ایل پی جی کے چھ اور سی این جی کا ایک سلینڈر درست حالت میں ملے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا ‘‘ان تمام سیلینڈرز کو بم کے ساتھ ہی منسلک کیا گیا تھا لیکن بم پوری طرح پھٹ نہ سکا۔،،

پولیس کے مطابق اگر بم مکمل طور پر پھٹتا تو دھماکے میں بھاری جانی اور مالی نقصان ہوسکتا تھا۔

پولیس کے تحقیقاتی ذرائع کے مطابق کار میں ہونے والا دھماکا ٹائم ڈیوائس سے کیا گیا۔ گاڑی میں جو بارودی مواد استعمال کیا گیا وہ المونیم نائٹریٹ ہوسکتا ہے۔ تاہم ابھی مزید تحقیقات جاری ہیں۔

پولیس کے مطابق تباہ ہونے والی کار اتوار کی شام کو جمشید کوارٹر کے علاقے سے چوری ہوئی تھی۔ جس کی ایف آئی آر متعلقہ تھانے میں درج کرائی جاچکی تھی۔ پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔

کراچی میں ایک ماہ کے دوران دہشتگردی کی یہ تیسری بڑی واردات ہے۔ صرف دس روز قبل ہی کلفٹن کے علاقے میں تین دہشتگردوں نے چینی قونصل خانے کو نشانہ بنایا تھا جس میں دو پولیس اہلکاروں سمیت چار افراد ہلاک ہوگئے تھے جبکہ قانون نافذ کرنے والے اداروں سے مقابلے کے بعد تینوں حملہ آور بھی مارے گئے تھے۔

اسی طرح 17 نومبر کو قائد آباد کے علاقے میں مارکیٹ میں بم دھماکے میں 2 افراد ہلاک جبکہ 11 زخمی ہوگئے تھے۔ شہر میں دہشتگردی کی نئی لہر میں اب تک 6 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

شہر میں کئی سال سے جاری ٹارگٹڈ آپریشن سے امن و امان میں قدرے بہتری دیکھنے میں آئی ہے تاہم اس نئی لہر سے شہر میں امن و امان کی صورتحال پر دوبارہ سوالات اٹھنا شروع ہورہے ہیں۔

ادھر پولیس کے اعلیٰ افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ کہ شہر کے پوش علاقے میں کار بم دھماکہ، چینی قونصل خانے پر ناکام حملے کا تسلسل بھی ہوسکتا ہے۔ اور اس زاوئیے پر بھی تحقیقات کی جائیں گی

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG