رسائی کے لنکس

logo-print

انسانی اعضا کے کاروبار پر سزائے موت کی تجویز


انسانی اعضا کے کاروبار پر سزائے موت کی تجویز

چین میں پالیسی ساز ایک نئے قانون پر غور کر رہے ہیں جس کے تحت انسانی اعضا کا غیر قانونی کاروبار کرنے والے افراد کو موت کی سزا دی جا سکے گی۔

سرکاری خبررساں ادارے کے مطابق مجوزہ قانون میں زبردستی انسانی اعضا حاصل کرنے یا کسی شخص کو اُنھیں عطیہ کرنے پر مجبور کرنے والے مجرمان کے لیے 10 سال قید، عمر قید یا سزائے موت تجویز کی گئی ہے۔ اس وقت اس جرم میں ملوث افراد پر محض غیرقانونی کاروبار کا الزام عائد کیا جا سکتا ہے۔

ماہرین کی رائے میں نیا قانون چین اور دوسرے ملکوں میں انسانی اعضا کی ’بلیک مارکیٹ‘ پر قابو پانے کے لیے لازمی ہے۔

مجوزہ قانون کو بدھ کے روز نیشنل پیپلز کانگریس کی قائمہ کمیٹی کے سامنے پیش کیا گیا تھا۔ منظوری کی صورت میں اس قانون کا نفاذ یک مئی سے شروع ہو جائے گا۔

XS
SM
MD
LG