رسائی کے لنکس

logo-print

چین: ہائی ٹیک کارکنوں کا 12 گھنٹوں کے دفتری اوقات پر احتجاج


چین کی ایک ہائی ٹیک کمپنی پاورٹیک کا صدر دفتر، فائل فوٹو

چین میں ہائی ٹیک ورکرز کی جانب سے طویل دفتری اوقات کے خلاف ایک آن لائن مہم چلائی جا رہی ہے، جو بڑی تیزی سے مقبول ہو رہی ہے۔ اس مہم سے یہ اندازہ بھی ہوتا ہے کہ چین کی ہائی ٹیک کمپنیاں اپنے کارکنوں سے کتنا زیادہ کام لیتی ہیں۔

یہ آن لائن مہم جسے 996.ICU کا نام دیا گیا ہے، مائیکروسافٹ کی کوڈ شیئرنگ ویب سائٹ Github.com پر اپنے آغاز کے وقت تو بہت معمولی سی تھی مگر اب یہ بہت پھیل چکی ہے اور چین میں ٹوئٹر کے طرز پر قائم ویب سائٹ ویبو پر اس بارے میں بہت بحث ہو رہی ہے۔ اس موضوع ہر ایک پوسٹ کو دس لاکھ سے زائد صارفین نے دیکھا ہے۔

996.ICU سے مراد یہ ہے کہ اگر آپ صبح 9 بجے سے شام 9 بجے تک مسلسل چھ دن کام کرتے رہیں گے تو آپ آخرکار ICU (اسپتال کے انتہائی نگہداشت کے یونٹ) میں پہنچ جائیں گے۔

اس مہم کا ہدف چین کی کچھ سب سے بڑی ہائی ٹیک کمپنیاں ہیں۔ مہم چلانے والوں نے ایک بلیک لسٹ بھی بنائی ہے جس میں کارکنوں سے بہت زیادہ کام لینے والی کمپنیوں کو رکھا گیا ہے۔

تحریک شروع کرنے والوں کا کہنا ہے کہ یہ کوئی سیاسی مہم نہیں ہے۔ ان کا مقصد صرف مزدوروں کے لئے بنائے گئے قوانین کو نافذ کروانا ہے۔

چین کے لیبر لا کے مطابق مالکان اپنے ملازمین کو اوور ٹائم کے لئے کہہ تو سکتے ہیں مگر یہ اوور ٹائم ایک ماہ میں 36 گھنٹے سے زیادہ نہیں ہو سکتا۔

ایک ہفتے میں 72 گھنٹے کام کرانا خلاف قانون ہے۔ مگر اس کے باوجود بہت سی کمپنیاں مختلف طریقے اختیار کر کے قانون کی گرفت سے بچ جاتی ہیں۔

ہانگ کانگ کے چائنا لیبر بلیٹن سے وابستہ جیفری کروتھال کا کہنا ہے کہ ٹیک کمپنیاں بہت عرصے سے اپنے کارکنوں سے طویل گھنٹوں پر مشتمل شفٹ میں کام لے رہی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ شروع میں تو کارکن اس لیے اضافی گھنٹے کام کرنے پر راضی ہو جاتے تھے کیونکہ ٹیک کمپنیوں کی تنخواہیں دوسری کمپنیوں کے مقابلے میں زیادہ تھیں۔ لیکن اب ماضی جیسی صورت حال نہیں رہی۔

وہ کہتے ہیں کہ اب کارکنوں کو دوسری کمپنیوں کے مقابلے میں زیادہ معاوضہ نہیں دیا جا رہا، اس لئے وہ کہہ رہے ہیں کہ جب معاوضہ زیادہ نہیں ہے تو پھر میں اتنا زیادہ کام کیوں کروں؟

چین سوشل میٖڈیا پر سخت کنٹرول کرتا ہے جس کے اثرات اب اس مہم پر بھی نظر آنے شروع ہو گئے ہیں۔ کچھ انٹرنیٹ براؤزرز کے اس آن لائن تحریک کو بلاک کرنا شروع کر دیا ہے۔

تاہم چین کے سرکاری میڈیا نے اس مہم کا نوٹس لیتے ہوئے نوجوان ٹیک ورکرز کے حق میں آواز اٹھائی ہے۔

چین کے سرکاری اخبار ’چائنا یوتھ ڈیلی‘ نے طویل دفتری اوقات کے خلاف اپنے آرٹیکل میں لیبر قوانین پر سختی سے عمل کرانے پر زور دیا ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG