رسائی کے لنکس

چین میں ایک بچہ فی خاندان پالیسی میں نرمی کا عندیہ

چین نے اپنی ’’ایک بچہ فی خاندان‘‘ پالیسی میں نرمی کا عندیہ دے رکھا ہے۔ 2020ء تک کے لیے اصلاحات سے متعلق منصوبے میں اقتصادی حکمتِ عملی کے علاوہ سماجی پالیسیوں میں تبدیلیاں بھی شامل ہیں۔ چین میں ایک بچہ فی خاندان پالیسی 1970ء کی دہائی کے اواخر میں متعارف کروائی گئی تھی۔ سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق اگر میاں بیوی میں سے کوئی بھی ایک اپنے والدین کی واحد اولاد ہو تو اُن کا اپنا خاندان دو بچوں پر مشتمل ہو سکتا ہے۔
مزید

چین نے اپنی ایک بچہ فی خاندان پالیسی میں نرمی کا عندیہ دے رکھا ہے۔ 2020ء تک کے لیے اصلاحات سے متعلق منصوبے میں اقتصادی حکمتِ عملی کے علاوہ سماجی پالیسیوں میں تبدیلیاں بھی شامل ہیں۔
1

چین نے اپنی ایک بچہ فی خاندان پالیسی میں نرمی کا عندیہ دے رکھا ہے۔ 2020ء تک کے لیے اصلاحات سے متعلق منصوبے میں اقتصادی حکمتِ عملی کے علاوہ سماجی پالیسیوں میں تبدیلیاں بھی شامل ہیں۔

چین میں ایک بچہ فی خاندان پالیسی 1970ء کی دہائی کے اواخر میں متعارف کروائی گئی تھی۔
2

چین میں ایک بچہ فی خاندان پالیسی 1970ء کی دہائی کے اواخر میں متعارف کروائی گئی تھی۔

چین کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق اگر میاں بیوی میں سے کوئی بھی ایک اپنے والدین کی واحد اولاد ہو تو اُن کا اپنا خاندان دو بچوں پر مشتمل ہو سکتا ہے۔
3

چین کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق اگر میاں بیوی میں سے کوئی بھی ایک اپنے والدین کی واحد اولاد ہو تو اُن کا اپنا خاندان دو بچوں پر مشتمل ہو سکتا ہے۔

مجوزہ پالیسی کے مطابق اب ہر شادی شدہ  جوڑا دو بچے پیدا کرسکتے ہیں۔
4

مجوزہ پالیسی کے مطابق اب ہر شادی شدہ  جوڑا دو بچے پیدا کرسکتے ہیں۔

مزید لوڈ کریں

XS
SM
MD
LG