رسائی کے لنکس

logo-print

متنازع جزائر پر امریکہ کی ثالثی مسترد


متنازع جزائر پر امریکہ کی ثالثی مسترد

چین نے بیجنگ اور ٹوکیو کے درمیان جزائر سے متعلق تنازع کے حل کے لیے امریکی ثالثی کی پیشکش مسترد کر تے ہوئے کہا ہے کہ یہ مسئلہ طرفین کو خود حل کرنا چاہیئے۔

چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے منگل کے روز میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ امریکہ نے اس تنازع پر غوروخوض کے لیے ایک سہ فریقی اجلاس کی پیشکش کی تھی۔ اِن جزائر کی حدود میں جاپانی سکیورٹی فورسز نے ستمبر میں چینی ماہی گیروں کی ایک کشتی کے کپتان کو گرفتار کیا تھا۔

ترجمان نے کہا کہ اجلاس کی تجویز’محض ایک امریکی تصور‘ تھا اور یہ تنازع’صرف دونوں ملکوں کا معاملہ ہے‘۔

انھوں نے امریکہ کے اُس بیان کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا کہ یہ جزائر امریکہ اور جاپان کے درمیان باہمی دفاعی معاہدے کی زمرے میں آتے ہیں۔ اُن کا کہنا تھا کہ یہ ’بالکل غلط‘ بیان ہے اور امریکہ کو اپنا موقف فوری طور پر بدلنا ہوگا۔

اس تنازع کی وجہ سے ایشیا کی اِن دو بڑی اقتصادی قوتوں کے دوطرفہ تعلقات میں انتہائی تناؤ پایا جا رہا ہے۔ متنازع جزائرکا انتظام جاپان کے ہاتھ میں ہے لیکن چین بھی اِن کی ملکیت کا دعویٰ دار ہے۔

امریکی وزیر خارجہ نے گذشتہ ہفتے ویت نام میں منعقد ہونے والے علاقائی اجلاس میں چین اور جاپان کے درمیان ثالثی کی پیشکش کی تھی۔

XS
SM
MD
LG