رسائی کے لنکس

logo-print

چین میں کرونا وائرس سے مزید 45 افراد ہلاک، مرنے والوں کی آخری رسومات پر پابندی عائد


حکام نے 24 گھنٹوں میں مزید 45 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی۔ جس کے بعد وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 304 ہو گئی ہے (فائل فوٹو)

چین میں کرونا وائرس پر کوشش کے باوجود قابو نہیں پایا جاسکا ہے جس سے اموات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ اتوار کو حکام نے 24 گھنٹوں میں مزید 45 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی۔ جس کے بعد وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 304 ہو گئی ہے۔

چین کے نیشنل ہیلتھ کمیشن نے مرنے والوں کی آخری رسومات کی ادائیگی پر پابندی بھی عائد کر دی ہے تاکہ مرنے والوں کے عزیز و اقارب وائرس سے محفوظ رہ سکیں۔

اس حوالے سے نیشنل ہیلتھ کمیشن کی جانب سے ایک نیا قانون تشکیل دیا گیا ہے جس کے تحت مردے کی آخری رسومات پر پابندی لگائی گئی تاہم کمیشن کی جانب سے اس کا متبادل نہیں بتایا گیا۔

فلپائن میں بھی ایک شخص ہلاک

ادھر اتوار کو فلپائن میں حکام نے کرونا وائرس سے متاثرہ ایک شخص کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی۔

حکام کا کہنا تھا کہ ہلاک ہونے والا شخص چینی باشندہ تھا۔

فلپائن میں ایک چینی شخص کی ہلاکت کے بعد یہ کرونا وائرس سے بیرون چین ہونے والی پہلی موت ہے۔

فلپائن کے محکمہ صحت نے بتایا کہ وسطی صوبے کے شہر ووہان کا ایک 44 سالہ شخص فلپائن میں ہلاک ہوگیا۔ اسے نمونیا کی شکایت پر اسپتال داخل کیا گیا تھا۔

مرنے والا شخص 38 سالہ چینی خاتون کا ساتھی تھا ۔ یہ دونوں 21 جنوری کو ووہان سے ہانگ کے راستے فلپائن پہنچے تھے۔

بھارت میں کرونا وائرس کا دوسرا کیس

دوسری جانب بھارت میں کرونا وائرس کا دوسرا کیس سامنے آگیا ہے۔

ووہان سے جنوری کے وسط میں ریاست کیرالہ پہنچنے والے طالب علم میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

حکام کے مطابق طالب علم کو علاج کے لیے اسپتال میں داخل کرا دیا گیا۔

چین میں اموات کی تعداد 304 ہو گئی

فرانس کے خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کے مطابق حکام نے وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے چینی صوبے ہوبی میں 45 نئی اموات کی تصدیق کی ہے۔

صوبائی صحت کمیشن نے 1921 نئے کیسز رپورٹ ہونے کی اطلاع دی ہے۔

صوبائی اور مرکزی حکومت کے اعداد و شمار کو جمع کریں تو اب تک رپورٹ ہونے والے کیسز کی مجموعی تعداد 13700 سے تجاوز کر گئی ہے۔

اس مرض کی ابتدا چین کے صوبے ہوبی کے شہر ووہان سے دسمبر 2019 میں ہوئی تھی۔

نئے قمری سال کی تعطیلات کے موقع پر ہزاروں افراد نے ملک کے متعدد شہروں اور غیر ملکی سفر کئے تھے جس کے سبب یہ مرض لوگوں میں منتقل ہوتا چلا گیا یوں متاثرہ افراد کی تعداد روز بہ روز بڑھ رہی ہے۔

چینی شہریوں نے تعطیلات کے بعد غیر ملکی سفر کیے جس سے دنیا کے 20 ممالک اس کی لپیٹ میں آچکے ہیں۔

نئے کیسز سامنے آنے کے بعد امریکہ نے چین سے آنے والے غیرملکیوں پر پابندی لگا دی ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG